رسائی کے لنکس

کوڑے کو دوبارہ قابل استعمال بنانا

  • ندیم یعقوب
  • واشنگٹن

سارے عمل کا مقصدصرف کوڑا ختم کرنا نہیں، بلکہ اسے ایندھن کے طور پر استعمال کرنا ہے اور اس سے پیدا ہونے والی حرارت سے دوبارہ قابل استعمال توانائی پیدا کی جاتی ہے

امریکی ریاست ورجنیا کی فیرفیکس کاؤنٹی میں روزانہ ہزاروں ٹن گھریلو کوڑا کرکٹ ٹھکانے لگایا جاتا ہے۔ اس پروگرام کی خاص بات یہ ہے کہ کچرا ایندھن کے طور پر استعمال کر کے اس سے بجلی پیدا کی جاتی ہے۔

فیرفیکس کاؤنٹی میں گھروں کا trash اکٹھا کرنے، دوبارہ قابلِ استعمال بنانےاور ٹھکانے لگانے کے لئے انتہائی جدید طریقہ اور ٹیکنالوجی استعمال کی جاتی ہے۔ کاؤنٹی حکام کہتے ہیں کہ اس عمل کی کامیابی کا دارومدار public private partnershipہے۔

مگر اس طریقہ کار کی خاص بات یہ ہے کہ گھروں کا کوڑا کرکٹ بن جاتا ہے بجلی پیدا کرنے کا ایندھن ۔




اِس عمل کا آغاز ہوتا ہے گھروں اور کمیونیٹیزسےکوڑا اٹھانے سے۔ اکثروبیشتر یہ کام پرائیوٹ کمپنیاں کرتی ہیں۔

پہلے مرحلے میں کوڑا کرکٹ ایک transfer station پہنچایا جاتا ہے، جو کاؤنٹی کی مقامی حکومت کے زیر انتظام کام کرتا ہے۔ اورہر ٹرک یہاں کچرا پھینکنے کے لئے فیس ادا کرتا ہے۔

ٹرانسفر اسٹیشن کے مینیجر لینی رائٹ کہتے ہیں کہ اوسطاً ہر روز چوبیس سو ٹن کچرا یہاں لایا جاتا ہے ۔’ ٹرک گھروں سے کچرا یہاں لاتے ہیں جو یہاں پر بڑے ٹرکوں میں لادا جاتا ہے‘۔
مگر ٹرکوں میں بھر کر لائے جانے والے کچرے کی یہ آخری منزل نہیں ۔

گھریلو کوڑا ٹھکانے لگانے کے دوسرے مرحلے میں یہاں پر کوڑا مخصوص ٹرکوں میں لاد کر علاقے میں ایک پرائیوٹ کمپنی کے حوالے کیا جاتا ہے۔مگر یہ مفت نہیں ہوتا۔ کاؤنٹی کو ہر ٹن کچرا ٹھکانے لگانے کے لئے کمپنی کو رقم ادا کرنی پڑتی ہے۔

مقامی حکومت کا کردار یہاں ختم ہوجاتا ہے اور پرائیوٹ سیکٹر پھر سےاس میں شامل ہوجاتا ہے۔Covanta Energy Corporation ایک نجی کمپنی ہے جو کوڑے کرکٹ کومناسب طریقے سے ٹھکانے لگاتی ہے۔

فیر فیکس کاؤنٹی میں کمپنی کےپلانٹ میں ہر سال لاکھوں ٹن کوڑا جدیدطریقے سے جلایا جاتا ہے۔

کووینٹا کے مینیجر سکاٹ ڈریو نے ’وائس آف امریکہ‘ کو بتایا کہ تین سے پانچ ہزار ٹن کوڑا روزانہ یہاں لایا جاتا ہے۔

’ یہاں پر کرینز کچرے کو بڑے بڑے ڈرمز میں بھرنے سے پہلے مکس کرتی ہیں جہاں سے اسے بھٹیوں میں پھینک دیا جاتا ہے جو بوائلرز میں بھاپ بنانے میں مدد دیتی ہیں۔‘
مگر اس سارے عمل کا مقصد صرف کوڑا ختم کرنا نہیں، بلکہ اسے ایندھن کے طور پر استعمال کرنا ہے اور اس سے پیدا ہونے والی حرارت سے دوبارہ قابل استعمال توانائی پیدا کی جاتی ہے ۔

پلانٹ میں بھاپ سے چلنے والے دو ٹربائنز نصب ہیں جو ہرروز تقریبا اسی میگا واٹ بجلی پیدا کرتے ہیں ۔

اس پلانٹ میں ہر روز تین ہزار ٹن کوڑا جلایا جاتا ہے اس کے باوجود فضائی آلودگی نہ ہونے کے برابر ہے۔ماحول دوست ٹیکنالوجی اس سارے عمل کا اہم حصہ ہے۔ سکاٹ کہتے ہیں کہ کارخانے سے بالکل کوئی دھواں خارج نہیں ہوتا اور نہ ہی کوئی شور ہوتا ہے۔ اسی لئے اس کے قریب بسنے والے رہائشیوں نے کبھی کوئی شکایت نہیں کی۔

وہ کہتے ہیں کہ اس پلانٹ میں پیدا کی جانے والی بجلی کمپنیوں کو فروخت کی جاتی ہے جو تقریباً اسی ہزار گھروں کے لئے کافی ہوتی ہے۔

صرف یہی نہیں ۔ پلانٹ میں کچرے سے دھاتوں کو الگ کیا جاتا ہے اور پھر انہیں recycle کیا جاتا ہے۔

میں Coventa دھاتیں اور استعمال ہونے والا پانی recycle کیا جاتا ہے اور پرانے طریقہ کار کے بر عکس اب جو کچرا ایندھن کے طور پر جلایا جاتا ہے اس کی راکھ قریب ہی landfillمیں دبائی جاتی ہے۔
XS
SM
MD
LG