رسائی کے لنکس

اٹلی: زلزلے کی پیش گوئی میں ناکامی پر سائنس دانوں کو سزائے قید

  • واشنگٹن

اٹلی کے قصبے لاکیولا میں 2009 کے زلزلے کے بعد تباہی کا منظر(فائل)

اٹلی کے قصبے لاکیولا میں 2009 کے زلزلے کے بعد تباہی کا منظر(فائل)

لاکیولا میں چھ اعشاریہ تین قوت کے زلزلے سے 300 سے زیادہ ا فراد ہلاک ہوگئے تھےاور بڑی تعداد میں عمارتوں کو نقصان پہنچا تھ۔ جب کہ بے گھر ہونے والے افراد کی تعداد ہزاروں میں تھی۔

اٹلی کی ایک عدالت نے پیر کے روز سات سائنس دانوں اور ماہرین کو 2009 میں وسطی علاقے کے ایک قصبے لاکیولا میں آنے والے تباہ کن زلزلے کے متعلق مناسب طورپر بروقت خبردار کرنے میں ناکامی پر سزا سنائی ہے۔ اس زلزلے سے بڑے پیمانے پر جانی اور مالی نقصان ہواتھا۔

پراسیکیوٹرز نے عدالت کو بتایا کہ سانحات اور خطرات پر نظر رکھنے کے قومی ادارے کے عہدے داروں نے شہریوں کو زلزلے سے قبل اس کے بارے میں نامکمل، مبہم اور متضاد معلومات فراہم کی تھیں۔

انٹرنیشنل سائنٹیفک کمیونٹی نے مقدمے کی مذمت کرتے ہوئے کہاہے کہ زلزلے کی پیش گوئی ناممکن ہے۔

کئی اور ماہرین نے عدالتی فیصلے پر اپنے خدشات کااظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ ان سزاؤں سے ماہرین اور سرکاری عہدے دار مستقبل میں قانونی ردعمل سے بچنے کے لیے اپنی ماہرانہ رائے دینے سے اجتناب کریں گے۔

لاکیولا میں چھ اعشاریہ تین قوت کے زلزلے سے 300 سے زیادہ ا فراد ہلاک ہوگئے تھےاور بڑی تعداد میں عمارتوں کو نقصان پہنچا تھ۔ جب کہ بے گھر ہونے والے افراد کی تعداد ہزاروں میں تھی۔

سائنس دانوں اور تعمیراتی ماہرین کا کہناہے کہ بڑی تعداد میں ہلاکتوں کی وجہ عمارتوں کی ناقص تعمیر تھی اور انہیں زلزلوں سے محفوظ رکھنے کے انتظامات نہیں کیے تھے۔

عدالت نے اپنے فیصلے میں سات سائنس دانوں کو چھ سال قید کی سزا سنائی ہے لیکن اپیلوں پر فیصلہ نہ ہونے تک انہیں جیل نہیں بھیجا جائے گا۔

اس مقدمے کی سماعت گذشتہ سال ستمبر میں شروع ہوئی تھی اور ایک سال سے زیادہ عرصے تک التوا میں رہنے کے بعد سماعتوں کا باقاعدہ آغاز اس مہینے ہوا تھا۔
XS
SM
MD
LG