رسائی کے لنکس

فلپائن: امن معاہدے پر عمل درآمد کی کوششیں

  • واشنگٹن

مورو اسلام لبریشن فرنٹ کے جنگجو

مورو اسلام لبریشن فرنٹ کے جنگجو

معاہدے کے تحت ایک 15 رکنی عبوری کمشن قائم کیا جائے گا جو 2016تک ایک نئے خودمختار علاقے کے قیام سے متعلق قانونی مسودہ تیار کرے گا۔

فلپائن میں باغی مسلمان کے ایک بڑے گروپ کے سربراہ نے کہاہے کہ لڑائی ختم کرنے کی غرض سے حکومت کے ساتھ جس معاہدےپر دستخط ہوئے تھے، اس کے ذریعے امن صرف فلپائنی مسلمانوں کی مدد سے ہی قائم ہوسکتا ہے۔

مراد ابراہیم نے ہفتے کے روز کہا کہ امن معاہدے پر عمل درآمد ایک پیچیدہ اور بڑا کام ہے اور یہ کہ اسے لازمی طورپر حقیقت کاروپ دھارنا چاہیے۔

ابراہیم کی تنظیم ، مورو اسلامک لبریشن فرنٹ نے حال ہی حکومت کے ساتھ امن کے ایک ابتدائی معاہدے پر دستخط کیے تھے جس میں 2016تک تنازع کے خاتمے کے طریقہ کار کا خاکہ پیش کیا گیا ہے۔

مسلمانوں کے باغی گروہ ملک کے جنوبی حصے میں خودمختاری کے حصول کے لیے کئی عشروں تک لڑتے رہے ہیں۔

عہدے داروں کا کہناہے کہ اس معاہدے کے ذریعے ملک کے جنوب میں بانگ سامورو کے نام سے ایک نئے خودمختار مسلم علاقے کاقیام عمل میں آئے گا۔

معاہدے میں اقتدار کی منتقلی، محصولات کا اختیار اور سرحدوں کے تعین کے طریقہ کار کی وضاحت کی گئی ہے۔

معاہدے کے تحت ایک 15 رکنی عبوری کمشن قائم کیا جائے گا جو 2016تک ایک نئے خودمختار علاقے کے قیام سے متعلق قانونی مسودہ تیار کرے گا۔

فلپائن کے جنوبی علاقے میں چار عشروں تک جاری رہنے والی لڑائیوں کے نتیجے میں ایک لاکھ 20 ہزار سے زیادہ افراد ہلاک ہوچکے ہیں اور تعمیر و ترقی کی سرگرمیاں رکی ہوئی ہیں۔
XS
SM
MD
LG