رسائی کے لنکس

طالبان حملے میں افغان پولیس کے 16اہلکار ہلاک


طالبان حملے میں افغان پولیس کے 16اہلکار ہلاک

طالبان حملے میں افغان پولیس کے 16اہلکار ہلاک

شمالی افغانستان میں طالبان جنگجوؤں نے الگ الگ حملوں میں پولیس کے ایک صوبائی افسر سمیت 16 اہلکاروں کو ہلاک کردیا ہے۔

ایک صوبائی ترجمان کے مطابق ہفتہ کی شب قندوز صوبے کے امام صاحب ضلع میں درجنوں طالبان عسکریت پسندوں نے ایک دور دراز چیک پوسٹ پر حملہ کر کے نو پولیس اہلکاروں کو ہلاک کر دیا۔

اسی افغان صوبے کے قلعہ زال ضلع میں پولیس کی ایک گاڑی پر حملہ کر کے ضلعی پولیس کے سربراہ کو اُن کے ڈرائیور سمیت ہلاک اور دو دیگر افراد کو زخمی کردیا گیا۔

افغانستان کے نسبتاََ پرُامن صوبے بدخشان کے کِشم ضلع میں بھی پولیس کی ایک گاڑی سڑک میں نصب دیسی ساختہ بم کا نشانہ بنی جس میں سوار پانچ اہلکار ہلاک ہو گئے۔

افغان حکام کا کہنا ہے کہ ایک روز قبل پاکستان کی سرحد کے قریب ایک مشرقی علاقے میں مسافر بس پر طالبان کے حملے میں ہلا ک ہونے والے 12 افراد افغان شہری تھے۔ اس حملے کے فوراََ بعد مقامی عہدے داروں نے مرنے والوں کو پاکستانی شہری بتایا تھا۔

طالبان حملے میں افغان پولیس کے 16اہلکار ہلاک

طالبان حملے میں افغان پولیس کے 16اہلکار ہلاک

گذشتہ ماہ افغانستان میں تعینات نیٹو افواج کو پچھلے نو سالوں کے دوران ہونے والی لڑائی میں سب سے زیادہ جانی نقصان اٹھانا پڑا تھا اور سرکاری طور پر جون میں 102 غیر ملکی فوجی ہلاک ہوئےتھے۔

اتوار کو کابل میں ایک نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے نیٹوکے ترجمان نے اس تاثر کورد کیا کہ گذشتہ ایک ہفتہ کے دوران طالبان شدت پسندوں کی بڑھتی ہوئی قوت اور حملوں میں اضافے سے افغانستان میں تعینات بین الاقوامی افواج مرعوب ہو گئی ہیں۔

ترجمان کے بقول باغیوں کی سرکوبی کے لیے اتحادی افواج کی کارروائیوں میں اضافے سے مخالفین بوکھلاہٹ کا شکار ہو گئے ہیں اورموجودہ حالات میں افغانستان میں اس سال ہونے والے پارلیمانی انتخابات کو ملتوی کرنے کی ضرورت نہیں۔

XS
SM
MD
LG