رسائی کے لنکس

افغانستان: پانچ نیٹو فوجی ہلاک


افغانستان: پانچ نیٹو فوجی ہلاک

افغانستان: پانچ نیٹو فوجی ہلاک

افغانستان میں جمعرات کو تشدد کے مختلف واقعات میں نیٹو کے پانچ فوجی ہلاک ہو گئے۔

نیٹو حکام کا کہنا ہے کہ تین فوجی مغربی افغانستان میں ہونے والے ایک بم دھماکے میں ہلاک ہوئے لیکن انھوں نے کسی مخصوص مقام کی نشاندہی نہیں کی اور نا ہی اس میں ہلاک ہونے والے فوجیوں کی قومیت کے بارے میں بھی کوئی اطلاع دی ۔جب کہ مشرقی افغانستان میں شدت پسندوں کے حملے میں ایک غیر ملکی فوجی مارا گیا اور ملک کے جنوب میں ہونے والے ایک بم دھماکے میں نیٹو کا ایک اور فوجی ہلاک ہوا۔

ایک روز قبل مشرقی اور جنوبی افغانستان میں ہوئے مختلف حملوں میں نیٹو کے چھ فوجی ہلاک ہو گئے تھے۔

نیٹو حکام نے انتباہ کیا ہے کہ شدت پسندوں کے خلاف کارروائی کے نتیجے میں آنے والے دنوں میں پرتشدد واقعات میں اضافے کا امکان ہے۔ رواں ماہ اب تک افغانستان مین نیٹو کے تیس سے زائد فوجی ہلاک ہو چکے ہیں جب کہ نوسالوں سے جاری جنگ میں 2010ء جانی نقصانات کے لحاظ سے اتحادی افواج کے لیے مہلک ترین ثابت ہو رہا ہے۔

ادھرنیٹو کے ایک اعلیٰ عہدیدار کا کہنا ہے کہ افغانستان میں قیام امن کے لیے شروع کیے گئے مفاہمتی عمل کے تناظر میں بین الاقوامی فوجی اتحاد طالبان رہنماؤں اور افغان حکومت کے اعلیٰ حکام کے درمیان رابطوں میں مدد فراہم کر رہا ہے۔

عہدیدار کے مطابق طالبان رہنماؤں کو بحفاظت دارالحکومت کابل تک کا سفر کرنے دیا جا رہا ہے جو نیٹو کی رضامندی کے بغیر بہت مشکل ہوتا۔

بلجیم کے دارالحکومت برسلز میں نام ظاہر نا کرنے کی شرط پر بدھ کے روزگفتگو کرتے ہوئے عہدیدار کا کہنا تھا کہ یہ رابطے فریقین کے درمیان مفاہمتی عمل کی جانب ابتدائی اقدام ہے۔

طالبان نے لڑائی بند کرنے کے مقصد سے افغان حکومت کے ساتھ بات چیت کی اطلاعات کو رد کر دیا ہے۔ افغان صدر حامد کرزئی نے رواں ہفتے تصدیق کی تھی کہ ان کی حکومت طالبان کے ساتھ مذاکرات کر رہی ہے۔

افغانستان اور پاکستان کے لیے خصوصی امریکی ایلچی رچرڈ ہالبروک کا کہنا ہے کہ امریکہ اس بات چیت میں شامل نہیں ہے لیکن وہ مفاہمت کی کوششوں کی حمایت کرتا ہے بشرطیکہ عسکریت پسند افغانستان کے آئین کا احترام کریں، القاعدہ سے علیحدگی اختیار کریں اور ہتھیار پھینک دیں۔

XS
SM
MD
LG