رسائی کے لنکس

’سلک روڈ‘ ویب سائٹ کے خالق کو 20 سال قید کا امکان


ملزم نے وعدہ کیا کہ اگر اسے پروبیشن ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے تجویز کردہ عمر قید سے کم سزا دی گئی تو وہ ’’باغیانہ اور اپنے آپ کو خطرے میں ڈالنے والا انسان‘‘ نہیں بنے گا جیسا کہ وہ پہلے تھا۔

استغاثہ کے وکلا نیویارک کے علاقے مین ہیٹن میں واقع ایک عدالت کو منشیات فروشی کی ’سلک روڈ‘ نامی ویب سائٹ بنانے کے جرم میں ایک شخص کو طویل قید کی سزا کا مطالبہ کر رہے ہیں۔

سان فرانسسکو سے تعلق رکھنے والے مدعا علیہ کا مؤقف ہے کہ اسے جلد سے جلد رہا کیا جائے تاکہ وہ یہ دکھا سکے کہ "وہ اب بدل چکا ہے۔"

31 سالہ راس ولیم البرچ کو فروری میں ایک وفاقی عدالت کی جانب سے مجرم قرار دیے جانے کے بعد جمعہ کو سزا سنائی جائے گی۔

یو ایس ڈسٹرکٹ جج کیتھرین فارسٹ کے نام ایک خط میں البرچ نے کہا کہ اسے اپنے ’’بہت معصومانہ اور بہت مہنگے‘‘ خیال پر افسوس ہے۔

اس نے کہا کہ اس نے ایک ’’خوفناک غلطی‘‘ سے اپنی زندگی تباہ اور اپنا مستقبل تاریک کر لیا ہے اور وعدہ کیا کہ اگر اسے پروبیشن ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے تجویز کردہ عمر قید سے کم سزا دی گئی تو وہ ’’باغیانہ اور اپنے آپ کو خطرے میں ڈالنے والا انسان‘‘ نہیں بنے گا جیسا کہ وہ پہلے تھا۔

تاہم استغاثہ نے بیس سال کی کم از کم سزا سے کافی زیادہ سزا تجویز کی ہے۔ استغاثہ نے کہا ہے کہ البرچ نے ’’قانون کی خلاف ورزی اور مجرمانہ لین دین کے لیے انٹرنیٹ کے استعمال کا ایک نیا منصوبہ بنایا تھا۔‘‘ ’سلک روڈ‘ شروع کرنے کے دو سال بعد وہ 2013 میں سان فرانسسکو کی ایک لائبریری میں پکڑا گیا۔

اسے منشیات اور سازش کے سات الزامات میں مجرم قرار دیا گیا۔

طویل سزا کی حمایت میں استغاثہ نے کہا کہ البرچ کے بڑے پیمانے پر منشیات کے کاروبار سے کم از کم چھ اموات واقع ہوئیں جن کا تعلق منشیات سے تھا، جس میں مائیکروسافٹ کا 27 سالہ ملازم اور آسٹریلیا کے شہر پرتھ میں ایک 16 سالہ لڑکے کی اموات شامل ہیں۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ اس نے اپنے لیے خطرہ بننے والے افراد کو راستے سے ہٹانے کے لیے کئی کرائے کے قاتلوں کی خدمات حاصل کیں، مگر حکام کو کسی کے قتل کے کوئی شواہد نہیں ملے۔

XS
SM
MD
LG