رسائی کے لنکس

ٹیسٹ سیریز کے لیے آسٹریلوی ٹیم کا دورہ بنگلہ دیش ملتوی


فائل فوٹو

فائل فوٹو

بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ کے صدر ناظم الحسن نے آسٹریلوی ٹیم کے دورے کے التوا پر مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بنگلہ دیش میں مہمان ٹیم کے لیے کوئی خطرہ نہیں ہے۔

آسٹریلیا نے سکیورٹی خدشات کی بنا پر دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز کے لیے بنگلہ دیش کا اپنا دورہ ملتوی کر دیا ہے۔

جمعرات کو کرکٹ آسٹریلیا کے چیف ایگزیکٹو جیمز سوتھدرلینڈ نے ایک بیان میں کہا کہ آسٹریلوی حکومت اور بورڈ کے سکیورٹی مشیروں کی طرف سے فراہم کردہ تازہ ترین معلومات کے بعد انھیں افسوس کے ساتھ کہنا پڑ رہا ہے کہ دورہ بنگلہ دیش کو ملتوی کرنے کے سوا ان کے پاس اور کوئی چارہ نہیں۔

بنگلہ دیش میں پہلا ٹیسٹ میچ نو اکتوبر سے شروع ہونا تھا اور اس کے لیے آسٹریلوی ٹیم انتظامیہ کے ڈھاکا میں موجود عہدیدار دو روز قبل ہی وطن واپس لوٹ گئے تھے۔

بنگلہ دیش میں رواں سال مذہبی انتہا پسندی پر مبنی تشدد کے واقعات رونما ہو چکے ہیں جن میں مختلف آزاد خیال بلاگرز کو قتل کیا گیا۔ ان میں ایک امریکی نژاد بنگالی بلاگر بھی شامل تھا۔

سکیورٹی خدشات میں اضافہ گزشتہ ہفتے ڈھاکا میں ایک اطالوی شہری کے قتل کے بعد ہوا جس کی ذمہ داری مبینہ طور پر شدت پسند گروپ داعش نے قبول کی تھی۔

ایک روز قبل ہی ڈھاکا میں واقع مغربی ممالک کے سفارتخانوں نے اپنے شہریوں کو داعش کے انتہا پسندوں کے مزید حملوں سے ہوشیار رہنے کی ہدایت کی تھی۔

امریکی سفارتخانے نے اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ اس کے پاس اس بات کی مصدقہ اطلاعات موجود ہیں کہ مسلح گروہ آسٹریلوی مفادات پر حملوں کی منصوبہ بندی کر رہے اور امریکہ سمیت مختلف غیر ملکی شہری ان حملوں کا شکار ہوسکتے ہیں۔

بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ کے صدر ناظم الحسن نے آسٹریلوی ٹیم کے دورے کے التوا پر مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بنگلہ دیش میں مہمان ٹیم کے لیے کوئی خطرہ نہیں ہے۔

بنگلہ دیش کا اصرار تھا کہ بین الاقوامی کھلاڑیوں کو وہ سکیورٹی فراہم کی جائے گی جو غیر ملکی سربراہان مملکت کے لیے ہوتی ہے۔

XS
SM
MD
LG