رسائی کے لنکس

برطانیہ، فرانس مشترکہ فوج تشکیل دینے کے قریب


برطانیہ، فرانس مشترکہ فوج تشکیل دینے کے قریب

برطانیہ، فرانس مشترکہ فوج تشکیل دینے کے قریب

یورپ کی دو بڑی فوجی قوتیں دفاعی اخراجات میں بچت کے لیے مشترکہ فوج تشکیل دے رہی ہیں۔

برطانیہ اور فرانس کے درمیان منگل کو لندن میں ایک معاہدے پر دستخط کیے جارہے ہیں جس کے تحت دونوں ملک مشترکہ فوج کی تشکیل اور جوہری تنصیبات میں تجربات میں شراکت داری شامل ہے۔

برطانوی وزیراعظم ڈیوڈ کیمرون نے پیر کے روز قانون سازوں کو یقین دلایا تھا کہ اس معاہدے سے مستقبل میں برطانیہ کی طرف سے انفرادی طور پر فوجی کارروائیوں پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔

سینئر برطانوی عہدیداروں نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا ہے کہ اس نئی مشترکہ فوج میں پانچ ہزار فوجی ہر وقت کسی جگہ تعیناتی کے لیے تیار رہیں گے اور دونوں ملک ایک دوسرے کے طیارہ بردار بحری جنگی جہازوں کو بھی استعمال کرسکیں گے۔

عالمی اقتصادی بحران کے بعد سست رفتار بحالی نے دونوں ایٹمی قوتوں کو مجبور کر دیا ہے کہ وہ اپنے دفاعی اخراجات میں کمی کریں۔ برطانیہ نے حال ہی میں اپنے دفاعی بجٹ میں اگلے چارسالوں کے لیے آٹھ فیصد کمی کرنے کا اعلان کیا تھا۔

برطانیہ اور فرانس روایتی حریف رہے ہیں لیکن دونوں نے بالکانز اور افغانستان میں اپنے فوجی بھیجے ۔ اس کے علاوہ دونوں ملکوں کے درمیان اختلافات بھی ہیں۔ فرانس نے برطانیہ کے برعکس 2003ء میں عراق میں اپنی فوجی نہیں بھیجی تھی ۔

XS
SM
MD
LG