رسائی کے لنکس

یورپین کمیشن کے نئے ارکان کا اعلان


یورپین کمیشن کے نومنتخب صدر جین کلاڈ جنر اپنی کابینہ کے ناموں کا اعلان کر رہے ہیں۔

یورپین کمیشن کے نومنتخب صدر جین کلاڈ جنر اپنی کابینہ کے ناموں کا اعلان کر رہے ہیں۔

یورپی کمیشن کے نومنتخب صدر جین کلاڈ جنکر نے اپنی 27 رکنی کابینہ کے ناموں کا اعلان کیا جو 2014ء سے 2019ء تک ذمہ داریاں انجام دے گی۔

یورپین کمیشن کے نومنتخب صدر جین کلاڈ جنکر نے آئندہ پانچ برسوں کے لیے کمیشن کے نئے عہدیداران کے ناموں کا اعلان کردیا ہے ۔

خیال رہے کہ 28 رکنی یورپین کمیشن یورپی یونین کا انتظامی ادارہ ہے جو یونین کی قانون سازی، فیصلوں اور معاہدات پر عمل درآمد اور روزمرہ کے امور کی نگرانی کرتا ہے۔

کمیشن ایک حکومت کی طرح کام کرتا ہے جس میں یورپی یونین کی تمام 28 رکن ریاستوں کا ایک، ایک نمائندہ شامل ہوتا ہے۔ 'کمشنر' کے نام سے پہچانے جانے والے یہ نمائندے اپنی حکومت کے بجائے یورپی یونین کے مفادات کی نمائندگی کرتے ہیں۔

برسلز میں قائم یورپین یونین کے صدر دفتر میں بدھ کو ایک پریس کانفرنس کے دوران جین کلاڈ جنکر نے اپنی 27 رکنی کابینہ کے ناموں کا اعلان کیا جو 2014ء سے 2019ء تک ذمہ داریاں انجام دے گی۔

کمیشن کے نومنتخب صدر نے نامزد کمشنرز کو "ایک کامیاب ٹیم" قرار دیتے ہوئے کہا کہ وہ ایک ایسے وقت میں یورپ کی قیادت کا منصب سنبھال رہے ہیں جب یورپی معیشت بحران سے نکل کر ایک بار پھر ترقی کی جانب مائل ہے۔

نئی کابینہ میں یورپی ملکوں کے پانچ سابق وزرائے اعظم، چار سابق نائب وزرائے اعظم اور 19 سابق وزرا شامل ہیں۔ خود جین کلاڈ جنکر بھی لگسمبرگ کے وزیرِاعظم رہ چکے ہیں اور انہیں رواں سال جون میں یورپی رہنماؤں نے کمیشن کا نیا صدر نامزد کیا تھا۔

نامزد ارکان میں نو خواتین اور 19 مرد ہیں جب کہ کمیشن کے سات میں سے تین نائب صدور کے عہدے بھی خواتین کو دیے گئے ہیں۔

معیشت سے متعلق دو اہم ترین وزارتیں یونین کے دو بڑے ملکوں – برطانیہ اور فرانس - کے حصے میں آئی ہیں۔ برطانوی پارلیمان کے ایوانِ بالا کے سابق رہنما جوناتھن ہل کو یورپین کیپٹل مارکیٹس اور بینکوں سمیت معاشی امور کی نگرانی سونپی گئی ہے جب کہ فرانس کے سابق وزیرِ خزانہ پیرے موسکوویسی مالی امور کے نگران ہوں گے۔

یورپی یونین کے خارجہ امور کی ذمہ داری اٹلی کی فیڈریکا موغیرینی کو سونپی گئی ہے جو موجودہ کمشنر کیتھرین ایشٹن کی جگہ سنبھالیں گی۔

کمیشن کے نومنتخب صدر کی جانب سے نامزد کیے جانے والے عہدیداران کو یورپی پارلیمنٹ کی توثیق درکار ہوگی جس کے بعد نئے صدر اور ان کی کابینہ یکم نومبر سے آئندہ پانچ برسوں کے لیے اپنی ذمہ داریاں سنبھالیں گے۔

XS
SM
MD
LG