رسائی کے لنکس

پانچ برطانوی فوجیوں پر قتل کا مقدمہ


افغانستان میں ایک کارروائی میں مصروف برطانوی فوجی (فائل فوٹو)

افغانستان میں ایک کارروائی میں مصروف برطانوی فوجی (فائل فوٹو)

افغانستان میں2011ء میں ایک عسکریت پسند کی ہلاکت کے واقعہ کی تحقیقات کے سلسلے میں گرفتار پانچ فوجیوں کو قتل کے الزامات کا سامنا ہے۔

برطانیہ کی وزارت دفاع نے کہا ہے کہ افغانستان میں2011ء میں ایک عسکریت پسند کی ہلاکت کے واقعہ کی تحقیقات کے سلسلے میں گرفتار پانچ فوجیوں کو قتل کے الزامات کا سامنا ہے۔

برطانوی حکام کا کہنا ہے کہ اس واقعہ سے تعلق کے شبے میں مجموعی طور پر رائل میرین کے نو اہلکاروں کو حراست میں لیا گیا تھا، تاہم ان میں سے چار کو بعد میں رہا کر دیا گیا۔

باور کیا جاتا ہے کہ افغان جنگ کے دوران پہلی مرتبہ برطانوی فوجیوں کو گرفتار کر کے ایک فوجی عدالت میں ان پر قتل کا مقدمہ چلایا جائے گا۔

ذرائع ابلاغ کی اطلاعات کے مطابق یہ گرفتاریاں افغانستان میں تعیناتی کے دوران کسی دوسرے واقعہ میں ملوث ہونے کے الزامات کا سامنا کرنے والے زیر حراست ایک برطانوی فوجی کے لیپ ٹاب کمپیوٹر سے ملنے والی ویڈیو فلم کے بعد کی گئیں۔

وزیر دفاع فلپ ہمنڈ نے اتوار کو اس واقعہ کی تفصیلات بیان کرنے سے گریز کیا، لیکن اُن کا اصرار تھا کہ اُن کی وزارت قوانین پر علمدرآمد کو یقینی بنانے کا عزم کیے ہوئے ہے۔
XS
SM
MD
LG