رسائی کے لنکس

کیمرون: شمالی علاقوں میں برقع پہننے پر پابندی


An old woman, who fled her home due to violence from the Islamic extremists group Boko Haram, is seen inside a refugee camp in Minawao, Cameroon, Feb. 25, 2015.

An old woman, who fled her home due to violence from the Islamic extremists group Boko Haram, is seen inside a refugee camp in Minawao, Cameroon, Feb. 25, 2015.

علاقے کے گورنر مجیاوا باقری کہتے ہیں کہ "میں نے یہ اقدام علاقے میں پیدا ہونے والی سلامتی کی صورتحال کے تناظر میں کیا۔"

وسطی افریقی ملک کیمرون نے اپنے دور افتادہ شمالی خطے میں برقع پہننے پر پابندی عائد کر دی ہے۔

علاقائی گورنر نے بتایا کہ یہ اقدام گزشتہ ہفتے پیش آنے والے دہشت گرد واقعے کے تناظر میں کیا گیا ہے جس میں روایتی مذہبی لباس پہنے دو خواتین خودکش بمباروں نے کارروائی کی تھی۔

مشتبہ طور پر بوکوحرام سے تعلق رکھنے والی ان خواتین نے شمالی قصبے فوٹوکول میں یہ کارروائی کی تھی جس میں کم ازکم 13 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

علاقے کے گورنر مجیاوا باقری کہتے ہیں کہ "میں نے یہ اقدام علاقے میں پیدا ہونے والی سلامتی کی صورتحال کے تناظر میں کیا۔"

شدت پسند گروپ بوکو حرام نائیجیریا کے شمال مشرقی علاقے میں سرگرم ہے اور وہاں آئے روز خودکش بمبار کارروائی ہوتی رہتی ہیں، لیکن پڑوسی ملکوں میں ایسے حملے شاذو نادر ہی ہوتے تھے۔

چاڈ اور کیمرون میں ہونے والے حالیہ حملوں کو شدت پسندوں کے خلاف خطے کی مشترکہ فوجی کارروائی کا ردعمل قرار دیا جا رہا ہے۔ ان دونوں ملکوں کی فوجیں بھی اس مشترکہ آپریشن میں شریک ہیں۔

کیمرون میں حکام نے رات کو موٹر سائیکل سواری اور گاڑیوں کے سیاہ شیشوں پر بھی پابندی عائد کر رکھی ہے۔

XS
SM
MD
LG