رسائی کے لنکس

کینیڈا جنگل کی آگ پر قابو پانے کے قریب


جنگل میں لگی آگ سے شعلے اور دھواں بلند ہو رہے ہیں۔ 7 مئی

جنگل میں لگی آگ سے شعلے اور دھواں بلند ہو رہے ہیں۔ 7 مئی

ماہرین کا خیال تھا کہ اتوار تک آگ دو گنا رقبے پر پھیل جائے گی مگر وہ بہت سست رفتار سے پھیلی ہے۔

کینیڈا کے حکام کا کہنا ہے کہ وہ کینیڈا کے مغربی صوبے البرٹا میں ایک بڑے رقبے پر پھیلی آگ پر قابو پانے کے قریب پہنچ گئے ہیں۔

البرٹا میں آگ کے شعبے سے تعلق رکھنے والے عہدیدار چاڈ موریسن نے کہا کہ علاقے میں کم درجہ حرارت اور ہلکی بارش نے ’’آگ پر قابو پانے کا بہترین موسم‘‘ پیدا کیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم آگ پر قابو پا سکتے ہیں اور اسے ختم کر سکے ہیں۔

اگرچہ آگ کے شعلے تیل صاف کرنے کی تنصیبات تک نہیں پہنچے مگر انہیں آگ کے باعث بند کر دیا گیا ہے جس سے عالمی منڈیوں میں تیل کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے۔

ابھی یہ واضح نہیں کہ ان تنصیبات کو کب دوبارہ کھولا جائے گا۔ تیل صاف کرنے والے بہت سے کارکنوں کو ان کے اہل خانہ سمیت وہاں سے محفوظ مقامات کی طرف منتقل کر دیا گیا ہے۔

خیال ہے کہ تیل کی پیداوار دو تین ہفتوں تک بند رہے گی۔

سعودی عرب اور وینیزویلا کے بعد البرٹا میں دنیا کے تیسرے بڑے تیل کے ذخائر پائے جاتے ہیں۔

البرٹا کی وزیراعلیٰ ریچل نوٹلی نے کہا کہ جنگل میں لگی آگ حکام کے اندازوں سے چھوٹی ہے مگر پھر بھی اس سے 160,000 ہیکٹیئر (395,368 ایکڑ) رقبے پر پھیلا جنگل اور عمارتیں تباہ ہو گئیں۔

ماہرین کا خیال تھا کہ اتوار تک آگ دو گنا رقبے پر پھیل جائے گی مگر وہ بہت سست رفتار سے پھیلی ہے۔

آگ نے پڑوسی صوبے ساسکچیوان کی سرحد کو بھی پار نہیں کیا جیسا کہ خدشہ ظاہر کیا جا رہا تھا۔

آگ بجھانے کے لیے لگ بھگ 1,500 پر مشتمل عملہ مصروفِ عمل ہے۔

البرٹا کے شہر فورٹ مک مرے میں یکم مئی کو آگ شروع ہونے کے بعد وہاں مقیم 90 ہزار افراد کو محفوظ مقامات پر منتقل کر دیا گیا ہے۔

XS
SM
MD
LG