رسائی کے لنکس

تشاد کی امداد: اقوامِ متحدہ کی عطیات دینے کی اپیل


تشاد کی امداد: اقوامِ متحدہ کی عطیات دینے کی اپیل

تشاد کی امداد: اقوامِ متحدہ کی عطیات دینے کی اپیل

اقوامِ متحدہ کے ایک ادارے کا کہنا ہے کہ کیونکہ امداد دینے وا لوں کا ہمسا یہ ملک نیجر پر ہی دھیان مرکوز ہے، تشاد تعلق رکھنے والے بیس لاکھ لوگ شدید قلت کا شکار ہیں۔

اقوامِ متحدہ کے خوراک سے وابستہ ادارے (ایف اے او) نے بتایا ہے کہ اُسے تشاد میں امدادی کارروائی کے لیے بیس لاکھ ڈالر ملے ہیں، جو گذشتہ نومبر میں اُس کی طرف سے درخواست کردہ رقم کے چھٹے حصے کے برابر ہے۔

ادارے نے کہا ہے کہ اِس کے مقابلے میں نیجر کے لیے اُسے 14کروڑ پانچ لاکھ ڈالر کی امداد مل چکی ہے۔ نیجر کو بھی غذائی خوراک کی سنگین کمی درپیش ہے۔

ایف اے او کے ہنگامی حالات سے نمٹنے پر مامور ماہر، فتومہ سعید نے بتایا ہے کہ امداد دینے والوٕں کے خیال میں نیجر کا یہ بحران 2005ء میں پیش آنے والے بحران کے مساوی ہے، جب متعدد افراد بھوک کی باعث ہلاک ہوگئے تھے۔

خشک سالی اور رینگنے والے کیڑوں کی وبا کے باعث تشاد کی غذائی پیداوار سخت متاثر ہوئی ہے۔
سعید نے بتایا کہ رقوم کی کمی کا مطلب یہ ہوگا کہ ملک کے دہقانوں میں تقسیم کے لیے ایف او اے کے پاس بیج اور جانوروں کا چارہ نہ ہونے کے برابر دستیاب ہوگا۔


XS
SM
MD
LG