رسائی کے لنکس

بچوں کے جنسی استحصال کے خلاف کارروائی، 60 افراد گرفتار


حکام کا کہنا ہے کہ' آپریشن ود آؤٹ بارڈر' یعنی سرحدوں سے ماورا کارروائی کے دوران تین بچوں کو بھی نجات دلائی گئی، جن کی عمریں 9، 14 اور 15 سال بتائی جاتی ہیں۔

لاطینی امریکہ، سپین اور امریکہ میں بچوں کی نازیبا تصاویر اور جنسی استحصال سے متعلق مواد کے خلاف مشترکہ کارروائی کے دوران 60 مشتبہ افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ' آپریشن ود آؤٹ بارڈر' یعنی سرحدوں سے ماورا کارروائی کے دوران تین بچوں کو بھی نجات دلائی گئی، جن کی عمریں 9، 14 اور 15 سال بتائی جاتی ہیں۔

ان بچوں کو میکسیکو میں بچوں سے متعلق نازیبا جنسی مواد بنانے کے لیے استعمال کیا جارہا تھا۔ یہ وڈیوز انٹرنیٹ، سماجی رابطے کی ویب سائٹس پر پوسٹ کرنے کے ساتھ ساتھ ای میل کے ذریعے بھی بھیجی جا رہی تھیں۔

فرانسیسی خبررساں ادارے 'اے ایف پی' کی رپورٹ کے مطابق میکسیکو کے نیشنل سکیورٹی کمیشن کی طرف سے اتوار دیر گئے جاری ہونے والے ایک بیان کے مطابق ان بچوں کو مبینہ طور پر "ان کے قریبی عزیز، ہمسائے ان کی نازیبا تصاویر اور جنسی مواد حاصل کرنے کے لیے استعمال کر رہے تھے جنہیں بعد میں انٹرنیٹ سائٹ اور سماجی میڈیا نیٹ ورک پر پوسٹ کیا جاتا اور ای میل کے ذریعے بھیجا جاتا تھا۔"

حکام کا کہنا ہے کہ سرحدوں سے ماورا کارروائی میں ارجنٹائن، برازیل، چلی، کولمبیا، کوسٹا ریکا، گوئٹےمالا، میکسیکو، پیراگوائے، سپین اور امریکہ میں چھاپے مارے گئے۔

XS
SM
MD
LG