رسائی کے لنکس

چین میں پائپ لائن سے بہتا ہوا تیل دریائے زرد میں پہنچ گیا


شمالی چین میں ایک ٹوٹی ہوئى پائپ لائن سے بہنے والا اندازاً ڈیڑھ لاکھ لِیٹر ڈِیزل اب دریائے زرد میں پہنچ گیاہے۔ یہ دریا چین میں لاکھوں لوگوں کے لیے تازہ پانی کا اہم وسیلہ ہے۔

سرکاری ذرائع ابلاغ نے کہا ہے کہ بہتا ہوا تیل دریا کے بالائى حصّے میں ایک معاون دریا میں پہنچا تھا اور پیر کے دن وہ دریائے زرد میں پہنچ گیا۔شمالی چین میں لاکھوں لوگوں سے کہا جا رہا ہے وہ فی الحال دریائے زرد کے پانی کا استعمال بند کردیں۔

بدھ کے روز پھٹی ہوٹی پائپ لائن سے بہنے والا ڈیزل سب سے پہلے وئے نامی دریا میں پہنچا تھا۔ صوبہ شانسی میں یہ پائپ لائن چین کی نیشنل پیٹرولیم کارپوریشن کی ملکیت ہے ۔ چین کی سرکاری خبر رساں ایجنسی سِنہوا نے کہا ہے کہ کمپنی نےتیل کے اخراج کی اطلاع ملتے ہی اگرچہ پائپ لائن بند کردی تھی ۔ لیکن ایک لاکھ 50 ہزار لیٹر کے قریب ڈیزل پہلے ہی بہہ چکا تھا۔

دریا میں پانی کی سطح پر تیل کے چادر کو محدود رکھنے کے لیے اور بہتے ہوئے تیل کو دریا میں مزید آگے جانے سے روکنے کے لیے اتوار کے روز سینکڑوں کارکن دریاکا رُخ بدلنےکے لیے نہریں کھودتے رہے اور درجنوں تیرتے ہوئے بند بناتے رہے تھے۔تاہم یہ تمام کوششیں ناکام ہوگئیں، اور اب ڈیزل دریائے زرد میں پہنچ گیا ہے۔

XS
SM
MD
LG