رسائی کے لنکس

''بجائے اس کے کہ ماضی کو کوسا جائے، ضرورت ہے کہ ہم مستقبل کی فکر کرتے ہوئے اس شعبے میں سرمایہ کاری پر توجہ دیں۔ اس لیے منگل جو بجٹ تجاویز میں کانگریس کو روانہ کر رہا ہوں اُن میں صاف توانائی اور ترقیات کے 2020ء کے ہدف کے حصول کے لیے مختص کی جانے والی رقوم کو دوگنا کیا گیا ہے''

امریکی صدر براک اوباما نے کہا ہے کہ موسمیاتی تبدیلی ''ہمارے عہد کے سب سے بڑے چیلنجوں میں سے ایک ہے''، اور امریکہ اِس چیلنج سے نمٹنے کی جستجو کر رہا ہے۔

اپنے ہفتہ وار ریڈیو خطاب میں، صدر نے کہا کہ ''آج پَون چکی یا شمسی توانائی سے حاصل ہونے والی بجلی درحقیقت بہت ارزاں اور شفاف ہے، جسے کئی ایک برادریاں استعمال کر رہی ہیں؛ جب کہ روایتی بجلی غیر شفاف اور خراب ہے''۔

صدر نے کہا کہ ''گذشتہ سات برس کے دوران، شمسی توانائی کے میدان میں ہم نے تاریخی سرمایہ کاری کی ہے، جس سے نجی شعبے کے اداروں میں روزگار کے لاکھوں مواقع پیدا ہوئے ہیں''َ۔

اُنھوں نے کہا کہ کوشش یہی ہے کہ شرح افزائش فروغ پاتا رہے، ''بجائے اس کے کہ ماضی کو کوسا جائے، ضرورت ہے کہ ہم مستقبل کی فکر کرتے ہوئے اس شعبے میں سرمایہ کاری پر توجہ دیں۔ اس لیے منگل جو بجٹ تجاویز میں کانگریس کو روانہ کر رہا ہوں اُن میں صاف توانائی اور ترقیات کے 2020ء کے ہدف کے حصول کے لیے مختص کی جانے والی رقوم کو دوگنا کیا گیا ہے''۔

اوباما کے بقول، '' جب کہ کانگریس میں ریپبلیکن ابھی تک موسمیاتی تبدیلی سے متعلق سوچ ہی رہے ہیں، اُن میں سے کئی ایک محسوس کرتے ہیں کہ شفاف توانائی اُن کے حلقے کے افراد کے لیے سودمند روزگار کی فراہمی کا ناقابل یقین ذریعے ہے''۔

صدر اوباما نے بتایا کہ ملک بھر میں لوگ اپنے اختلافات بھلا کر شفاف توانائی کی جانب متوجہ ہو رہے ہیں۔ بقول صدر، ''واشنگٹن کو بھی یہی کچھ کرنا ہوگا''۔

XS
SM
MD
LG