رسائی کے لنکس

کمبوڈیا: کمیونسٹ پارٹی کے سابق رہنماؤں کو عمر قید کی سزا


ان سابق اعلیٰ ترین عہدیداروں کا غلط کام کرنے کے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہنا تھا کہ انہیں ان جرائم کے بارے میں علم نہیں تھا۔

کمبوڈیا کی سابق کمیونسٹ پارٹی ’’کیمروج‘‘ کے دو رہنماؤں کو انسانیت کے خلاف جرائم کا ارتکاب کرنے پر عمر قید کی سزا سنائی گئی ہے۔

اقوام متحدہ کی حمایت یافتہ عدالت نے جمعرات کو 83 سالہ سابق سربراہ ریاست خیو سمپھان اور پارٹی کے 88 سالہ سابق اعلیٰ نظریہ ساز نیون چیا کے خلاف قتل، سیاسی ایذا رسانی اور دیگر غیر انسانی اقدامات کے الزامات کے ثابت ہونے پر یہ سزا سنائی۔

جج نل نون کی طرف سے سزا سنائے جانے کے موقع پر دونوں رہنماؤں کی طرف سے کوئی تاثرات دیکھنے میں نہیں آئے۔

کیمروج کے ان سابق اعلیٰ ترین عہدیداروں کا غلط کام کرنے کے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہنا تھا کہ انہیں نا تو ان جرائم کے بارے میں علم تھا اور نہ ان کے پاس انہیں روکنے کے کوئی اختیارات تھے۔

خیو سمپھان

خیو سمپھان

عدالت نے ان کے دلائل کو رد کرتے ہوئے کہا کہ بحیثیت ریاست کے سربراہ خیو سمپھان کو پارٹی کی پالیسی کا علم ہونا چاہیئے تھا۔ ٹرائبیونل کے سامنے یہ بات بھی آئی کہ نیون چیا جماعت میں ’’حتمی فیصلہ کرنے‘‘ کے اختیارات رکھتے تھے۔

ان دونوں کے وکلا کا کہنا تھا کہ وہ ٹرائبیونل کے اس فیصلے کے خلاف اپیل دائر کریں گے تاہم ججوں کا کہنا تھا کہ جرائم کی سنگینی کے پیش نظر دونوں افراد جیل میں رہیں گے۔

موجودہ مقدمہ 1975ء میں لاکھوں کی تعداد میں کمبوڈیا کی عوام کو فنوم پن سے دیہاتی بیگار کیمپوں میں زبردستی ڈالنے سے متعلق تھا۔

گزشتہ ہفتے شروع ہونے والے اس مقدمے کے دوسرے مرحلے میں ان دونوں رہنماؤں کے خلاف نسل کشی سمیت دیگر الزامات کے بارے میں شنوائی ہو گی۔

کیمروج کے پانچ سالہ دور حکومت میں زیادہ سے زیادہ 20 لاکھ افراد بھوک و پیاس اور زیادہ کام کرنے سے ہلاک ہوئے۔

XS
SM
MD
LG