رسائی کے لنکس

لائن آف کنٹرول پر 'بھارتی فائرنگ' سے چار افراد زخمی


لائن آف کنٹرول کے قریب گشت میں مصروف بھارتی فوجی (فائل فوٹو)

بیان کے مطابق زخمی ہونے والوں میں دو خواتین اور دو بچیاں شامل ہیں جنہیں پاکستانی فوج کے اہلکاروں نے اسپتال منتقل کر دیا ہے۔

پاکستان کی فوج نے کہا ہے کہ متنازع علاقے کشمیر کو منقسم کرنے والی عارضی حد بندی (لائن آف کنٹرول) پر بھارتی فورسز کی "بلا اشتعال" فائرنگ سے ایک ہی خاندان کے چار افراد زخمی ہوگئے ہیں۔

فوج کے شعبہ تعلقات عامہ "آئی ایس پی آر" کے مطابق پاکستان کے زیر انتظام کشمیر کے ضلع کوٹلی کے کھوئی رتہ سیکٹر پر یہ واقعہ پیش آیا جس کے جواب میں پاکستانی فورسز نے بھی فائرنگ کی۔

بیان کے مطابق زخمی ہونے والوں میں دو خواتین اور دو بچیاں شامل ہیں جنہیں پاکستانی فوج کے اہلکاروں نے اسپتال منتقل کر دیا ہے۔

بھارت کی طرف سے پاکستانی فوج کے اس بیان پر تاحال کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا ہے۔

دونوں ہمسایہ ایٹمی قوتوں کے درمیان متنازع علاقے کشمیر کی لائن آف کنٹرول پر 2003ء میں فائربندی کا معاہدہ ہوا تھا لیکن اس کے باوجود دونوں جانب سے فائرنگ اور گولہ باری کے تبادلے کے واقعات اکثر و بیشتر رونما ہوتے رہتے ہیں۔

دونوں ملک فائربندی معاہدے کی خلاف ورزی میں پہل کا الزام ایک دوسرے پر عائد کرتے ہیں۔

فائرنگ کے ان واقعات میں خاص طور پر گزشتہ سال سے قابل ذکر حد تک اضافہ دیکھا گیا ہے جس میں دونوں جانب سکیورٹی اہلکاروں سمیت عام شہریوں کا بھی جانی نقصان ہو چکا ہے۔

XS
SM
MD
LG