رسائی کے لنکس

مصر: اسرائیلی سرحد سے 15 تارکینِ وطن کی لاشیں برآمد


جزیرہ نما سینا میں اسرائیل - مصر سرحد کا ایک منظر

جزیرہ نما سینا میں اسرائیل - مصر سرحد کا ایک منظر

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ انہیں جائے واقعہ سے آٹھ افراد زخمی حالت میں بھی ملے ہیں جنہیں طبی امداد کے لیے اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

مصر میں پولیس نے اسرائیلی سرحد کے نزدیک واقع ایک علاقے سے 15 افریقی باشندوں کی لاشیں برآمد کی ہیں جنہیں گولی مار کر قتل کیا گیا ہے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ انہیں جائے واقعہ سے آٹھ افراد زخمی حالت میں بھی ملے ہیں جنہیں طبی امداد کے لیے اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ ہلاک اور زخمی ہونے والے تمام افراد افریقی تارکینِ وطن ہیں جو اتوار کی صبح جزیرہ نما سینا کے جنوبی سرحدی قصبے رفحہ کے نزدیک سے ملے ہیں۔ رفحہ کا قصبہ ایک جانب فلسطینی علاقے غزہ جب کہ دوسری طرف اسرائیل سے متصل ہے۔

تاحال یہ واضح نہیں کہ ان افراد کو کس نے گولیاں ماریں۔ مصری پولیس نے ہلاک اور زخمی تارکینِ وطن کی قومیت بھی نہیں بتائی ہے۔

جزیرہ نما سینا ان افریقی تارکینِ وطن کے راستے میں پڑتا ہے جو غیر قانونی طریقے سے اسرائیل میں داخلے کے خواہش مند ہوتے ہیں۔

تاہم حالیہ برسوں کے دوران مصر کے اس صحرائی علاقے میں شدت پسند مذہبی گروہوں کی سرگرمیوں میں اضافہ ہوا ہے اور یہاں مصری سکیورٹی فورسز اور جنگجووں کے درمیان کئی جھڑپیں بھی ہوچکی ہیں۔

علاقے میں شدت پسند تنظیم داعش سے ہمدردی رکھنے والے بعض گروہ بھی سرگرم ہیں جن کے حالیہ مہینوں کے دوران علاقے میں مصری فوج اور حکومت کی تنصیبات پر حملوں میں مصری فوج کے درجنوں اہلکار مارے جاچکے ہیں۔

گزشتہ ہفتے اس علاقے میں روس کا ایک مسافر طیارہ بھی گر کر تباہ ہوگیا تھا جس کے نتیجے میں طیارے میں سوار تمام 224 افراد مارے گئے تھے۔

شدت پسند تنظیم داعش سے وابستہ ایک مقامی گروہ نے طیارے کو مار گرانے کی ذمہ داری قبول کی تھی۔

XS
SM
MD
LG