رسائی کے لنکس

حماس کا مصر پر چار فلسطینیوں کو ہلاک کرنے کا الزام


عسکریت پسند فلسطینی تنظیم حماس نے مصر پر الزام عائد کیا ہے کہ اُس کی سکیورٹی فورسز نے غزہ اور مصر کی سرحد کے نیچے زیرِ زمین سُرنگ میں گیس بھر کر چار فلسطینی سمگلروں کو ہلاک کر دیا۔

غزہ کی پٹی میں طبّی کارکنوں نے کہا ہے کہ بدھ کے روز اس واقعے میں چار سمگلر دم گُھٹنے سے ہلاک ہوگئے اور سُرنگ کے اندر اور کئى افراد زخمی ہوئے۔

حماس کے عہدے داروں نے مصر کے حکام پر الزام عائد کیا ہے کہ انہوں نے سرحد کے آر پار سمگلنگ کی سرگرمیاں ختم کرنے کی ایک کوشش کے طور پر سُرنگ کے اندر زہریلی گیس بھری تھی۔انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ مصر اس واقعے کی چھان بین کرے اور جو لوگ اس کے ذمّے دار تھے ، اُنہیں سزادے۔

مصر کے عہدے داروں کا کہنا ہے کہ سکیورٹی فورسز نے حال ہی میں مصر اور غزہ کی سرحد کے نیچے کئى سُرنگوں کو بند کیا ہے۔لیکن انہوں نے کسی جانی نقصان کے بارے میں کچھ نہیں بتایا۔

مصر کی حکومت سرحد پر اُن زیرِ زمین سُرنگوں کے ایک وسیع جال کو ختم کرنے کے لیے پہلے بھی کوششیں کرتی رہی ہے، جو فلسطینی سمگلروں نے غزہ کے گرد اسرائیل اور مصر کی ناکہ بندی سے بچنے کے لیے بنائى ہیں۔مصر اپنی ان ہی کوششوں کے تحت سرحد پر ایک زیرِ زمین رکاوٹ بھی تعمیر کررہا ہے۔

2007 میں جب سے حماس نے غزہ کے علاقے کا کنٹرول سنبھالا ہے ،مصر اور اسرائیل نے غزہ سے ملحق اپنی سرحدوں کو بیشتر بند رکھاہوا ہے۔تاہم دونوں ملک انسانی ہمدردی کی بنیاد پر کچھ اشیا اور مخصوص لوگوں کوسرحد سے گزرنے کی اجازت دے دیتے ہیں۔

XS
SM
MD
LG