رسائی کے لنکس

دوسرے مرحلے کی تکمیل کے ساتھ ہی ایک گھنٹے میں ایک لاکھ 30ہزار زائرین بیک وقت طواف کر سکیں گے، جبکہ تمام تعمیراتی مراحل مکمل ہونے پر مسجد میں مزید20 لاکھ افراد کی گنجائش بڑھ جائے گی

کراچی... دنیا بھر سے حج اور عمرے کی ادائیگی کے لئے سعودی عرب پہنچنے والے افراد کی تعداد میں ہر سال اضافہ ہو رہا ہے۔ اس اضافے کے سبب ہی مسجد الحرام میں توسیع کا فیصلہ کیا گیا تھا، جس کا رمضان کی آمد کے ساتھ ہی دوسرا مرحلہ مکمل ہوگیا ہے۔

مسجد الحرام اور مسجد نبویﷺ کے متولی شیخ عبدالرحمٰن السدیس نے تعمیری کام کے جائزے کے بعد میڈیا کوبتایا کہ خانہ کعبہ کا طواف کرنے کے لئے مختص صحن یعنی’مطاف‘ کی نچلی اور پہلی منزل کی تعمیر مکمل ہوگئی ہے، جبکہ دوسری منزل کا بھی 80فیصد کام مکمل ہوگیا ہے، حتیٰ کہ لفٹ اور خودکار زینوں کی تنصیب بھی مکمل ہوگئی ہے۔

دوسرے مرحلے میں مطاف کے مشرقی حصے کی الفتح گیٹ سے عمرہ گیٹ تک توسیع کا کام ہونا تھا اور یہ کام دن رات محنت سے مکمل ہوا۔ یہ توسیعی کام 25 ہزار مربع میٹر پر مشتمل تھا، یعنی پہلے مرحلے سے دگنا رقبے پر۔

سعودی اخبار ’عرب نیوز‘ نے سینئرسعودی حکام کے حواے سے بتایا ہے کہ توسیع کے بعد ایک گھنٹے میں مزید75000 افراد بیک وقت طواف کرسکیں گے۔ اس طرح مجموعی طور پر ایک وقت میں ایک گھنٹے کے دوران ایک لاکھ تیس ہزار زائر ین طواف کرسکیں گے جبکہ مسجدمیں بیک وقت عبادت کرنے والے افراد کی تعداد میں 20 لاکھ کا اضافہ ہوجائے گا۔

اس توسیعی منصوبے پر 100 بلین ڈالر خرچ کئے جا رہے ہیں۔ تاہم، رمضان میں زائرین کے بے تحاشا رش اور حج سیزن کے باعث چار مہینے تک توسیع کا کام بند رہے گا۔

XS
SM
MD
LG