رسائی کے لنکس

روس پر نئی تعزیرات عائد کرنے پر اتفاق


مشرقی یوکرین میں روس نواز علیحدگی پسند

مشرقی یوکرین میں روس نواز علیحدگی پسند

بڑی اقتصادی قوتوں کے گروپ جی۔سیون نے اپنے ایک مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ وہ "مخصوص تعزیرات" کو تیز کرنے کے لیے اقدامات کریں گے۔

دنیا کی سات بڑی اقتصادی قوتوں "جی۔ سیون" نے یوکرین میں روس کے اقدامات کے خلاف ماسکو پر نئی پابندیاں عائد کرنے پر اتفاق کیا ہے۔

جی۔سیون امریکہ، کینیڈا، برطانیہ، فرانس، جرمنی، اٹلی اور جاپان پر مشتمل گروپ ہے اور اس نے اپنے ایک مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ وہ "مخصوص تعزیرات" کو تیز کرنے کے لیے اقدامات کریں گے۔

ایک امریکی عہدیدار کا کہنا تھا کہ یہ پابندیاں پیر تک عائد کی جاسکتی ہیں۔

کیئف اور روس کی فوجوں کی بڑی تعداد سرحدوں پر موجود ہے اور اسی دوران یوکرین کے وزیراعظم ارسنی یتسنیوک نے روس پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ یوکرین پر "سیاسی اور عسکری" طور پر قبضہ کرنا چاہتا ہے۔

مسٹر یتسنیوک کا کہنا تھا کہ عبوری کابینہ کے اجلاس میں بتایا کہ ماسکو"تیسری عالمی جنگ شروع کرنا چاہتا ہے۔

دریں اثناء امریکی فوج حکام نے کہا ہے کہ گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں روس کے طیارے متعدد بار یوکرین کی فضائی حدود میں داخل ہوئے۔ فضائی حدود کی خلاف ورزیوں کی مزید تفصیلات فراہم نہیں کی گئیں۔

وزارت دفاع کے ایک ترجمان نے ماسکو پر زور دیا کہ وہ " صورتحال میں اشتعال انگیزی کو ختم کرنے کے لیے فوری اقدامات کرے۔"
XS
SM
MD
LG