رسائی کے لنکس

عراقی صدر علاج کے لیے جرمنی منتقل


عراق کے صدر جلال طالبانی (فائل فوٹو)

عراق کے صدر جلال طالبانی (فائل فوٹو)

جرمنی کے وزیر خارجہ گوئیڈو ویسٹرویلے نے کہا کہ میں نے ان کی جلد صحت یابی کے لیے دلی تمناؤں کا پیغام بھیجا ہے۔

جرمنی کے وزیر خارجہ گوئیڈو ویسٹرویلے نے کہا ہے کہ عراق کے صدر جلال طالبانی علاج کے لیے جرمنی پہنچ گئے ہیں۔

جمعرات کو وزیر خارجہ نے کہا کہ صدر طالبانی کو تمام طبی سہولتیں فراہم کی جائیں گی لیکن اس بارے میں انھوں نے مزید تفصیلات بتانے سے گریز کیا۔

انھوں نے کہا کہ ’’میں نے ان کی جلد صحت یابی کے لیے دلی تمناؤں کا پیغام بھیجا ہے۔‘‘

79 سالہ عراقی صدر کو پیر کی شب شریانوں میں پیدا ہونے والی رکاوٹ کے باعث علاج کے لیے بغداد کے اسپتال میں داخل کیا گیا تھا۔

ایک روز قبل عراق میں محکمہ صحت کے عہدیداروں نے بتایا تھا کہ صدر کے علاج میں معاونت کرنے کے لیے بیرون ملک سے ماہرین صحت بھی بغداد پہنچے تھے۔

عراق کے صدر کو حالیہ برسوں میں صحت کے کئی مسائل کا سامنا رہ چکا ہے۔ 2008ء میں ان کی امریکہ میں ہارٹ سرجری ہوئی تھی۔

اسی طرح 2007ء میں اپنے وزن کی زیادتی کے علاج کے لیے بھی امریکہ کے ایک کلینک میں زیر علاج رہ چکے ہیں اور اسی سال دو ہفتوں سے زیادہ مدت تک اردن کے ایک اسپتال میں ان کے جسم میں پانی کی کمی اور تھکاوٹ کا علاج ہوتا رہا ہے۔
XS
SM
MD
LG