رسائی کے لنکس

جاپان کے محکمے کے مطابق، 1891ء کے بعد سے جب سے ماحولیاتی آلودگی کے حوالے سے باقاعدہ ریکارڈ برقرار رکھا جا رہا ہے، یہ فضائی آلودگی کی سب سے زیادہ نوٹ کی جانے والی شرح تھی

گذشتہ بہت عرصے سے ہماری دنیا میں بڑھتی ہوئی ماحولیاتی آلودگی کے بارے میں شعور اجاگر کرنے کی کوشش کی جاتی رہی ہے۔ سائنسدان بتاتے ہیں کہ فضائی آلودگی میں اضافہ کس طرح انسانوں کے لیے اور دنیا کے لیے خطرناک ثابت ہو سکتا ہے۔

نئے سائنسی شواہد بتاتے ہیں کہ بظاہر فضائی آلودگی کے بڑھتے رجحان میں کوئی کمی دیکھنے میں نہیں آ رہی، بلکہ دنیا بھر میں فضائی آلودگی میں اضافہ ہی ہوتا جا رہا ہے۔

جاپان میں موسمیاتی مدوجزر اور تبدیلیوں سے متعلق ادارہ ’جاپان میٹرولوجیکل ایجنسی‘ کے مطابق، رواں برس اپریل، مئی اور جون میں ماحولیاتی آلودگی سب سے زیادہ نوٹ کی گئی۔

جاپان کے محکمے کے مطابق 1891ء کے بعد سے جب سے ماحولیاتی آلودگی کے حوالے سے باقاعدہ ریکارڈ برقرار رکھا جا رہا ہے، یہ فضائی آلودگی کی سب سے زیادہ نوٹ کی جانے والی شرح تھی۔

جاپان کی جانب سے یہ ریکارڈ پیر کے روز جاری کیے گئے جس میں بتایا گیا ہے کہ رواں برس کی دوسری سہ ماہی پوری 20 ویں صدی کے اوسط موسم سے 0.68 سینٹی گریڈ زیادہ گرم رہی۔

امریکی خلائی ادارہ ناسا دنیا بھر کے اوسط درجہ ِحرارت کا تخمینہ لگانے کے لیے مختلف طریقہ ِکار استعمال کرتا ہے۔ مگر ناسا کی جانب سے بھی پیر کے روز جاری کیے گئے ریکارڈ کے مطابق رواں برس کی دوسری سہ ماہی کے نتائج جاپان کی جانب سے جاری کردہ نتائج سے مختلف نہیں تھے۔

XS
SM
MD
LG