رسائی کے لنکس

یونان: مکمل ہڑتال کے دوران ایتھنز کی سڑ کوں پر احتجاجی مظاہرین کا مارچ


یونان کے ہزاروں ہڑتالیوں نے ملک کے قرض کے بحران سے نمٹنے کے مقصد سے حکومت کے کفایت شعاری کے منصوبوں پر احتجاج کرنے کے لیے بدھ کے روز ایتھنز کی سڑکوں پر مارچ کیا۔

24 گھنٹوں کی ہرتال کے دوران تمام مسافر بردار اور مال بردار پروازیں بند ہوگئیں اور دارالحکومت میں لوگ بیشتر پبلک ٹرانسپورٹ سے بھی محروم رہے۔حکومت کے بیشتر دفاتر اور سروسیں بند ہوگئیں۔

یہ احتجاجی مظاہرے ایسے وقت میں شروع ہوئے ہیں جب ملک کی سو شلسٹ حکومت پر اس مطالبے سے دباؤ بڑھ گیا ہے کہ وہ اپنے خسارے کے اخراجات میں کمی لانے کا وعدہ پورا کرے۔احتجاجی مظاہروں میں پتھراؤ کرنے والے نوجوانوں اور پولیس کے درمیان ہاتھا پائى اور پولیس کی جانب سے آنسو گیس کا استعمال بھی شامل ہے۔

سٹینڈرڈ اینڈ پوور کا شمار دنیا کی اُن تین سرکردہ ایجنسیوں میں ہوتا ہے جو ملکوں کی قرض حاصل کرنے کی صلاحیت کی درجہ بندی کرتی ہیں اور اُس نے بدھ کے روز کہا ہے کہ ہوسکتا ہے کہ وہ ایک مہینے کے اندر اندر یونان کے درجے کو پست کردے۔ ایجنسی نے کہا ہے کہ ملک کو جو اقتصادی اور سیاسی چیلنج درپیش ہیں، اُن سے اُس کی بجٹ کے خسارے کو کم کرنے کی صلاحیت خطرے میں پڑ گئى ہے۔

2009ء کے آخر میں یونان کا خسارہ، ملک کی مجموعی قومی پیداوار کے 13 فیصد کے قریب تھا ۔ جو کہ یورپی یونین کی مقرر کی ہوئى آخری حد سے چار گنا سے بھی زیادہ ہے۔

XS
SM
MD
LG