رسائی کے لنکس

ہنگری : دریائے دینیوب میں زہریلے فضلے سے آبی حیات کو نقصان


ہنگری : دریائے دینیوب میں زہریلے فضلے سے آبی حیات کو نقصان

ہنگری : دریائے دینیوب میں زہریلے فضلے سے آبی حیات کو نقصان

ہنگری میں زہریلا صنعتی فضلہ دریائے دینیوب میں شامل ہونے کے بعد مردہ مچھلیاں پانی کی سطح پر نمودار ہونا شروع ہو گئی ہیں۔

حکام نے جمعرات کے روز بتایا تھا کہ یہ سرخی مائل فضلہ دینیوب میں شامل ہونے والی مارکل آبی گزر گاہ میں مچھلیوں کو نقصان پہنچانے کے بعد مرکزی دریا تک پہنچ گیا تھا۔

اس زہریلے فضلے کا بہاؤ پیر کو ایک ایلومینم بنانے والی تنصیب میں فضلے کے ایک بڑے ذخیرے میں شگاف کے بعد شروع ہوا اور اس سے چار افراد ہلاک اور ایک سو سے زائد زخمی ہوئے۔ تنصیب کے اطراف میں متعدد دیہات اس فضلے کی زد میں آئے جس سے یہاں موجود مویشی ہلاک اور فصلیں تباہ ہو گئیں۔

وہ ممالک جہاں سے دریائے دینیوب گزرتا ہے پانی میں کیمیائی مواد کی موجودگی کا مسلسل جائزہ لے رہے ہیں۔ دریائے دینیوب یورپ کا دوسرا طویل ترین دریا ہے اور بلیک سی میں گرنے سے پہلے کروشیا، سربیا ، رومانیہ، بلغاریہ، یوکرائن اور مول دووا سے بھی گزرتا ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ سربیا اور کروشیا کی حددود میں دریا میں اب تک زہریلے فضلے کی نشاندہی نہیں ہوئی ہے۔

XS
SM
MD
LG