رسائی کے لنکس

کینیا کے نائب صدر کی کمرہ عدالت میں پیشی ضروری: آئی سی سی


نائب صدر رتو اور کینیا کے صدر اوھورو مویگای کو الگ الگ مقدمات میں 2007ء کے صدارتی انتخابات کے دوران نسلی فسادات کی منصوبہ بندی کرنے کے الزامات کا سامنا ہے جن میں گیارہ سو سے زائد افراد مارے گئے تھے۔

جرائم کی عالمی عدالت ’انٹرنیشنل کریمنل کورٹ‘ یعنی (آئی سی سی) نے کینیا کے نائب صدر ولیم رتو کو مقدمے کے دوران حاضری سے استثنٰی دینے کے اپنے فیصلے کو واپس لے لیا ہے۔

جمعہ کو سنایا جانے والا نیا فیصلہ کینیا کے رہنماؤں کے لیے ایک بڑا دھچکا ثابت ہوا کیوں کہ وہ اپنے خلاف چلائے جانے والے مقدمے سے دور رہنے کے راستے تلاش کر رہے تھے۔

عدالت کے ججوں نے متفقہ فیصلے میں کہا کہ ولیم رتو کو مقدمے کی سماعت کے دوران بعض اوقات پیش نا ہونے کی مشروط اجازت کا فیصلہ غلط تھا۔

نائب صدر رتو اور کینیا کے صدر اوھورو مویگای الگ الگ مقدمات میں کو 2007ء کے صدارتی انتخابات کے دوران نسلی فسادات کی منصوبہ بندی کرنے کے الزامات کا سامنا ہے جن میں گیارہ سو سے زائد افراد مارے گئے تھے۔

اس سے قبل ججوں نے مسٹر رتو کو ہیگ میں مقدمے کی سماعت کے دوران مسلسل حاضری سے مستثنٰی قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ وہ گواہان سے جرح کے دوران اُن کے ابتدائی اور اختتامی بیانات کے موقع پر عدالت میں حاضر رہیں۔
XS
SM
MD
LG