رسائی کے لنکس

غیرفلمی خاندان سے تعلق رکھنے والوں کو بالی وڈ میں جگہ بنانے کے لئے زیادہ محنت کرنا پڑتی ہے۔ شروع شروع میں لوگ مجھے بھی نظرانداز کرتے تھے۔ لیکن، میری کام سے محبت اور لگن دیکھ کر اب عزت کرتے ہیں

’برفی‘ جیسی غیر معمولی فلم میں غیرمعمولی اداکاری سے دھوم مچانے والی الینا ڈی کروز کا کہنا ہے کہ ’بالی وڈ میں قسمت کی دیوی سب پر مہربان ہوتی ہے۔ لیکن، جب لوگوں کی چاہت کم ہونے لگے تو فلم نگری کو خوشی خوشی الوداع کہہ دینا چاہئے۔‘

بھارتی اخبار’ٹائمز آف انڈیا‘ سے گفتگو کرتے ہوئے الینا ڈی کروز نے مزید کہا کہ ’برفی‘ جیسی آف بیٹ فلم کے بعد ’پھٹا پوسٹر نکلا ہیرو‘، ’میں تیرا ہیرو‘ اور ’ہپی اینڈنگ‘ جیسی کمرشل مصالحہ فلموں میں کام کرنا ان کا اپنا فیصلہ تھا۔ یہاں کچھ اچھا ہوجائے تو اداکار کو اسی ایک کیریکٹر میں بند کردیا جاتا ہے۔ مجھے بھی’برفی‘ کے بعد اس سے ملتے جلتے کردار آفر ہوئے۔ لیکن میں مختلف کردار ادا کرنا چاہتی ہوں۔‘

الینا کے مطابق، غیرفلمی خاندان سے تعلق رکھنے والوں کو بالی وڈ میں جگہ بنانے کے لئے زیادہ محنت کرنا پڑتی ہے۔ شروع شروع میں لوگ مجھے بھی نظرانداز کرتے تھے لیکن میری کام سے محبت اور لگن دیکھ کر اب عزت کرتے ہیں۔

الینا نے ساتھی ایکٹریسز میں عالیہ بھٹ کو اپنی فیورٹ قراردیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ‘عالیہ نے ’ہائی وے‘ میں بہت اچھی اداکاری کی۔ وہ میک اپ کے بغیر بھی اتنی ہی خوبصورت لگتی ہے جتنی میک اپ کے ساتھ۔۔ امتیاز علی بہت زبردست ڈائریکٹر ہیں۔ مستقبل میں ان کے ساتھ کام کرنا چاہوں گی۔‘

الینا ڈی کروز کا یہ بھی کہنا تھا کہ انہیں ایکٹنگ سے محبت ہے۔ لیکن اس کے باوجود اداکاری ان کے لئے محض ایک کام ہے۔ جس دن لگا کہ کام متاثر اور پرستاروں کی تعداد کم ہو رہی ہے، فلم نگری چھوڑنے میں دیر نہیں لگائیں گی۔

انہوں نے کہا کہ ’میری ماں نے ہمیشہ مجھے یہی سکھایا کہ کام دیانت داری سے کرنا۔۔ لیکن کبھی کام سے محبت نہ کرنا تاکہ چھوڑنا پڑے تو تکلیف نہ ہو۔‘

اس سوال پر کہ آپ نے یہ کہا تھا کہ اداکاراوٴں کو ذہنی طور پر خود کو انڈسٹری چھوڑنے کے لئے تیار رکھنا چاہئے، خود آپ کتنی تیار ہیں، الینا نے کہا کہ وہ اداکارہ بننا ہی نہیں چاہتی تھیں۔ لیکن، جب بھی ایسا موقع آیا وہ بخوشی انڈسٹری چھوڑ دیں گی۔ گلوکاری انہیں پسندید ہے۔ اگر بالی وڈ کو خیرباد کہا تو وہ گلوکاری کریں گی اور باقاعدہ اسے سیکھ کر سنگنگ میدان میں قدم رکھیں گی۔
XS
SM
MD
LG