رسائی کے لنکس

خبر رساں ادارے رائیٹرز کے مطابق ملک کے سابق وزیر دفاع اے کے اینتھونی نے 2012ء میں پارلیمنٹ میں بتایا تھا کہ ملک کے فضائی بیٹرے میں شامل مگ طیاروں میں سے نصف گزشتہ چار دہائیوں میں گر کر تباہ ہوئے۔

بھارتی فضائیہ کا ایک جنگی طیارہ منگل کو بھارت کے زیر انتظام کشمیر میں گر کر تباہ ہو گیا۔

اس حادثے میں پائلٹ کی ہلاکت کی تصدیق کر دی گئی تاہم طیارہ گرنے سے زمین پر ہونے والے نقصان کے بارے میں مصدقہ معلومات حاصل نہیں ہوئی ہیں۔

ایک ہی پائلٹ کے بیٹھنے کی گنجائش والا مگ جی-21 طیارہ کشمیر کے جنوبی علاقے اواتنی پورہ میں گر کر تباہ ہوا۔

ملک میں مگ طیاروں کو پیش آنے والے حادثات کے سلسلے کی یہ تازہ کڑی ہے۔ ان طیاروں کو بھارتی ذرائع ابلاغ میں "اڑن تابوت" کے نام سے پکارا جاتا رہا ہے

بھارت کے زیر انتظام کشمیر کے علاقے میں اس سے قبل بھی مگ طیاروں کو حادثات پیش آ چکے ہیں۔

خبر رساں ادارے رائیٹرز کے مطابق ملک کے سابق وزیر دفاع اے کے اینتھونی نے 2012ء میں پارلیمنٹ میں بتایا تھا کہ ملک کے فضائی بیٹرے میں شامل مگ طیاروں میں سے نصف گزشتہ چار دہائیوں میں گر کر تباہ ہوئے۔

بھارت ہتھیار خریدنے والا دنیا کا ایک بڑا ملک ہے اور توقع کی جا رہی ہے کہ آئندہ ایک دہائی میں یہ اپنی فوجی قابلیت کو بڑھانے پر 100 ارب ڈالر خرچ کرے گا۔
XS
SM
MD
LG