رسائی کے لنکس

تاحال اس قتل کے محرکات کا پتا نہیں چل سکا ہے اور پولیس کے مطابق وہ رنجن کے پیشہ وارانہ امور سمیت تمام پہلوؤں سے اس قتل کی تحقیقات کر رہی ہے۔

بھارت کی مشرقی ریاست بہار میں نامعلوم مسلح افراد نے ایک صحافی کو گولیاں مار کر قتل کر دیا جو کہ 24 گھنٹوں کے دوران صحافیوں کے لیے خطرناک ترین ملکوں میں شامل بھارت میں صحافی کے قتل کا دوسرا واقعہ ہے۔

پولیس کے مطابق ضلع سیوان میں ہندی زبان کے ایک روزنامہ "ہندوستان" کے بیورو چیف راج دیوو رنجن اپنے موٹر سائیکل پر محو سفر تھے کہ جمعہ کو دیر گئے نامعلوم مسلح افراد نے انھیں نشانہ بنایا۔

تاحال اس قتل کے محرکات کا پتا نہیں چل سکا ہے اور پولیس کے مطابق وہ رنجن کے پیشہ وارانہ امور سمیت تمام پہلوؤں سے اس قتل کی تحقیقات کر رہی ہے۔

بہار سے ملحقہ ریاست جھارکھنڈ میں جمعرات کو دیر گئے ٹی وی چینل کے ایک صحافی اکلیش پرتاپ سنگھ بھی اسی طرح نامعلوم مسلح افراد کی گولیوں کا نشانہ بن کر جان کی بازی ہار گئے تھے۔

اکلیش کے قتل کے بعد ان کے لواحقین اور مقامی افراد نے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے قتل میں ملوث عناصر کے خلاف فوری کارروائی کا مطالبہ کیا۔

بھارت کا شمار صحافیوں کے لیے دنیا کے خطرناک ترین سمجھے جانے والے ملکوں میں ہوتا ہے جہاں صحافتی تنظیموں کے بقول اس شعبے سے وابستہ افراد کو پولیس، سیاستدانوں اور جرائم پیشہ عناصر کی طرف سے دباؤ کا سامنا رہتا ہے۔

گزشتہ سال جون میں ریاست اترپردیش میں ایک صحافی پٹرول چھڑک کر نذر آتش کیا جا چکا ہے جب کہ اکتوبر میں اسی ریاست میں ٹی وی چینل سے وابستہ ایک صحافی کو فائرنگ کر کے قتل کیا جا چکا ہے۔

XS
SM
MD
LG