رسائی کے لنکس

بھارت: امریکی کمپنی کے اسلحے سے لدے بحری جہاز کا عملہ گرفتار


پولیس کے مطابق جہاز پر بڑی تعداد میں اسلحہ اور بارود لدا ہوا تھا اور ملک کی سمندری حدود میں بغیر اجازت کے داخل ہونے والے جہاز کے عملے کے 33 افراد کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔

بھارت میں پولیس نے کہا ہے کہ اس نے اپنے ملک کی سمندری حدود میں بغیر اجازت داخل ہونے والے امریکی کمپنی کے بحری جہاز کے عملے میں شامل 33 افراد کو حراست میں لے لیا ہے۔

پولیس کے مطابق جہاز پر بڑی تعداد میں اسلحہ اور بارود لدا ہوا تھا۔

حکام کے مطابق عملے کو جمعہ کے روز جنوبی بندرگاہ ٹیٹیکورین سے گرفتار کیا گیا۔

اسلحہ و بارود ملنے کے بعد اس جہاز کو گزشتہ ہفتے سمندری حدود میں قبضے میں لینے کے بعد ملک کے جنوبی ساحل تک لایا گیا۔

بھارت میں حکام کے مطابق ایم وی سیمین گارڈ اوہائیو کو 12 اکتوبر کو ملک کی سمندری حدود میں بغیر اجازت داخل ہونے پر ساحلی محافظوں نے قبضے میں لے لیا تھا۔

یہ جہاز امریکی کمپنی ایڈوانفورڈ کا ہے جو امریکہ میں قائم سمندری حدود کی ایک سکیورٹی کمپنی ہے۔

عملے میں برطانیہ، یوکرائن، ایسٹونیا اور بھارت کے شہری بھی شامل ہیں۔

بھارت میں دفاعی تجزیہ کار بحرتھ ورما کا کہنا ہے کہ اگر یہ جہاز بھارتی سمندری حدود میں نہیں تھا تو ساحلی محافظوں یعنی ’کوسٹ گارڈ‘ کے عملے کو اسے قبضے میں نہیں لینا چاہیئے تھا۔

امریکی کمپنی کا دعویٰ ہے کہ اُس کا بحری جہاز سمندری طوفان ’پائیلین‘ سے بچنے کے لیے بھارت کے پانی کی حدود میں داخل ہوا تھا۔
XS
SM
MD
LG