رسائی کے لنکس

بھارت: اقتصادی افزائش کے ساتھ ساتھ دفاعی اخراجات میں اضافہ


نئی دہلی میں شروع ہونے والی چار روزہ اسلحہ نمائش میں رکھی گئی مختلف قسم کی بندوقیں

نئی دہلی میں شروع ہونے والی چار روزہ اسلحہ نمائش میں رکھی گئی مختلف قسم کی بندوقیں

نئى دہلی میں سینکڑوں اسلحہ سازکمپنیوں نے ہتھیاروں کےمیلےمیں شرکت کی ہےجِس میں رائیفل سے لے کر ٹینک تک مختلف ہتھیاروں کی نمائش کی جارہی ہے

اس وقت جبکہ بھارت اپنے فوجی سازوسامان کو بہتر بنانے کے لیے اربوں ڈالر خرچ کرنے کی تیاری کررہا ہے، نئى دہلی میں سینکڑوں اسلحہ سازکمپنیوں نے ہتھیاروں کے ایسے میلے میں شرکت کی ہے، جس میں رائیفل سے لے کر ٹینک تک، مختلف ہتھیاروں کی نمائش کی جارہی ہے۔

بھارت کے وزیرِ دفاع اراکاپرامبیل کُریان اینتونی نے کہا ہے کہ اُنہیں توقع ہے کہ بھارت کی اقتصادی افزائش کے جاری رہنے کے ساتھ ساتھ، ملک کے فوجی اخراجات میں خاطر خواہ اضافہ ہوگا۔اس وقت یہ اخراجات ملک کی مجموعی قومی پیداوار کے ڈھائى فیصد کے برابر ہیں۔

انہوں نے یہ بات نئى دہلی میں ہتھیاروں کے اُس میلے میں کہی ہے، جو ہر دو سال بعد لگتا ہے اور جس میں اس بار بھارت کی مسلح افواج کے لیے درجنوں ملکوں نے اپنے بنائے ہوئےہتھیاروں اور دوسرے فوجی سازوسامان کی نمائش کی ہے۔

اس چار روزہ میلے میں ، جو کہ ایشیا میں اس قسم کا سب سے بڑا میلہ ہے، لگ بھگ 650 اسلحہ ساز کمپنیاں حصّہ لے رہی ہیں۔

اس وقت بھارت اپنی ضرورت کا تقریباً 70 فیصد فوجی سازوسامان باہر سے درآمد کرتا ہے۔وزیرِ دفاع اینتونی نےاُمید ظاہر کی ہے کہ مستقبل میں درآمدات میں کمی آئے گی۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کا ہدف انجام کار اس میدان میں خود کفیل ہونا ہے۔

XS
SM
MD
LG