رسائی کے لنکس

عالمی تجارتی تنظیم پہلی بار جامع معاہدے پر متفق


ڈبلیو ٹی او کے سربراہ روبرٹو ازویدو نے خوشی سے اشکبار ہوتے ہوئے کہا کہ ’’تاریخ میں پہلی متربہ ڈبلیو ٹی او کچھ کر دکھانے میں کامیاب ہوئی ہے۔‘‘

عالمی تجارتی تنظیم ’ ڈبلیو ٹی او‘ اپنے قیام کے بعد پہلی مرتبہ ایک جامع تجارتی معاہدے پر متفق ہوئی ہے جس کے تحت توقع کی جا رہی ہے کہ عالمی معیشت میں دس کھرب ڈالر تک اضافہ ممکن ہو سکے گا۔

انڈونیشیا کے سیاحتی مقام بالی میں ہفتہ کو ہونے والے تنظیم کے اختتامی اجلاس میں ڈبلیو ٹی او کے سربراہ روبرٹو ازویدو نے خوشی سے اشکبار ہوتے ہوئے کہا کہ ’’تاریخ میں پہلی متربہ ڈبلیو ٹی او کچھ کر دکھانے میں کامیاب ہوئی ہے۔‘‘

لگ بھگ 160 ممالک کے وزراء چار روز تک اس اجلاس میں بحث و مباحثے میں مصروف رہے۔

کیوبا نے امریکہ کی جانب سے اس پر عائد پابندیوں کو ہٹانے سے متعلق اس معاہدے میں زور نہ دینے کی وجہ سے پہلے اسے مسترد کرنے کی دھمکی دی تھی لیکن بعد ازاں اس نے معاہدے پر اپنے تحفظات واپس لے لیے۔

روبرٹو ازویدو کا کہنا تھا کہ ’’اس مرتبہ تمام ممبران ایک ساتھ ہیں۔ ہم نے دنیا کو واپس ’عالمی تجارتی تنظیم‘ میں شامل کر لیا ہے۔ ۔ ۔ ہم کام پر واپس آگئے ہیں اور یہ صرف شروعات ہے۔‘‘

اس معاہدے کے تحت تجاری کے طریقہ کار کو سادہ بنایا گیا ہے اور اس میں غریب ممالک کو اپنا سامان فروخت کرنے کے لیے آسانی فراہم کی گئی ہے۔
XS
SM
MD
LG