رسائی کے لنکس

جوہری مذاکرات میں 'شفافیت' ہی پیش کرسکتے ہیں: صدر روحانی


ایران کے صدر حسن روحانی

ایران کے صدر حسن روحانی

اتوار کو صدر روحانی کا کہنا تھا کہ "ایران نے کبھی بھی بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانے والے ہتھیاروں کے حصول کی کوشش نہیں کی۔"

ایران کے صدر حسن روحانی کا کہنا ہے کہ عالمی طاقتوں سے جوہری مذاکرات پر سوائے "شفافیت" کے ان کے پاس اور کچھ نہیں ہے۔

اتوار کو سرکاری ٹی وی پر نشر ہونے والے بیان میں ان کا کہنا تھا کہ ایران اپنا پروگرام ترک کر کے "جوہری عدم مساوات" اور "سائنسی تفریق" قبول نہیں کرے گا۔

ان کا یہ بیان ایک ایسے وقت سامنے آیا ہے جب چند روز بعد ہی ایران اور مغربی طاقتوں کے درمیان تہران کے جوہری پروگرام سے متعلق بات چیت کا نیا دور شروع ہونے جا رہا ہے۔

صدر روحانی کے ناقدین کا کہنا ہے کہ انھوں نے مغرب کو اس معاملے پر بہت سی رعائتیں دی ہیں۔

مغرب باور کرتا ہے کہ ایران اپنا جوہری پروگرام نیوکلیئر ہتھیاروں کی تیاری کے لیے استعمال کر رہا ہے لیکن تہران انھیں مسترد کرتے ہوئے کہتا رہا ہے کہ اس کا جوہری پروگرام پرامن مقاصد کے لیے ہے۔

اتوار کو صدر روحانی کا کہنا تھا کہ "ایران نے کبھی بھی بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانے والے ہتھیاروں کے حصول کی کوشش نہیں کی۔"

گزشتہ سال نومبر میں چھ عالمی طاقتوں اور ایران کے درمیان ایک عبوری معاہدہ طے ہوا تھا جس کے تحت تہران کو اپنی جوہری سرگرمیاں محدود کرنے کے عوض اس پر عائد متعدد تعزیرات میں نرمی کا کہا گیا تھا۔
XS
SM
MD
LG