رسائی کے لنکس

فریق گزشتہ سال ہونے والے ایک عبوری معاہدے کی بنیاد پر جولائی کے اواخر تک ایک مستقل معاہدہ کرنا چاہتے ہیں۔

ایران اور چھ عالمی طاقتوں کے نمائندے تہران کے متنازع جوہری پروگرام سے متعلق ایک جامع معاہدے پر آمادگی کے لیے تیسری بار مذاکرات کر رہے ہیں۔

ویانا میں منگل کو ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف اور یورپی یونین کے خارجہ پالیسی کی سربراہ کیتھرین ایشٹن کی صدارت میں مزکرات کا آغاز ہوا۔

فریقین گزشتہ سال ہونے والے ایک عبوری معاہدے کی بنیاد پر جولائی کے اواخر تک ایک مستقل معاہدہ کرنا چاہتے ہیں۔

عبوری معاہدے کی رو سے ایران نے اپنے حساس جوہری پروگرام کو محدود کرنے پر اتفاق کیا جس کے بعد امریکہ، برطانیہ، چین، فرانس، روس اور جرمنی پر مشتمل گروپ نے ایران پر عائد بعض پابندیوں میں کچھ نرمی کی۔

دونوں فریقوں نے کہا ہے کہ وہ آئندہ ماہ سے مستقل معاہدے کے مسودہ کی تیاری شروع کر دیں گے۔
XS
SM
MD
LG