رسائی کے لنکس

عراق: پارلیمانی الیکشن کے 52 اُمیدوار نا اہل قرار دے دیے گئے


عراق: پارلیمانی الیکشن کے 52 اُمیدوار نا اہل قرار دے دیے گئے

عراق: پارلیمانی الیکشن کے 52 اُمیدوار نا اہل قرار دے دیے گئے

عراقی الیکشن کمیشن کی ایک کمیٹی نے مارچ کے پارلیمانی انتخابات میں حصّہ لینے والے 52 اُمیدواروں کو صدام حسین کی خلافِ قانون بعث پارٹی کے ساتھ مبیّنہ رابطوں کےالزام میں نا اہل قرار دے دیا ہے۔

خود مختار الیکشن کمیشن کی احتسابی کمیٹی کے عہدے داروں نے پیر کے روز کہا ہے کہ نا اہل قرار دیے جانے والوں میں سے دو اُمیدوار سات مارچ کے الیکشن میں پارلیمنٹ کی دو نشستوں پر کامیاب ہوگئے تھے۔

عہدے داروں نے کہا ہے کہ نا اہل قرار دیے جانے والے ایک کامیاب اُمیدوار کا تعلق سابق وزیرِ اعظم ایاد علاوی کے اتحاد عراقیہ سے ہے۔الیکشن کمیشن کے عہدے داروں نے نا اہل قرار دیے ہوئے دوسرے کامیاب اُمید وار کے بارے میں یہ نہیں بتایا کہ اُس کا تعلق کس پارٹی یا اتحاد سے ہے۔

نااہل قرار دینے کے اس فیصلے سے وہ انتخابی نتائج متاثر ہوسکتے ہیں، جن میں مسٹر علاوی کے سیکیولر اتحاد نے پارلیمنٹ میں وزیرِ اعظم نوری المالکی کے اتحاد سے صرف دو نشستیں زیادہ حاصل کی ہیں۔

اگرناہل قرار دیے جانے سے پارلیمنٹ میں ہر اتحاد کی جیتی ہوئى نشستوں کی تعداد میں تبدیلی آئى تو ڈالے ہوئے تمام ووٹوں کا از سرِ دوبارہ حساب لگانا پڑے گا۔عہدے داروں کا کہنا ہے کہ نا اہل قرار دیے ہوئے کسی اُمید وار کی نشست، حقیقت میںاُسی پارٹی کے کسی ایسے ہارے ہوئے اُمید وار کو دے دی جائے گی، جو ووٹوں کے بہت زیادہ فرق سے الیکشن نہ ہارا ہو۔

XS
SM
MD
LG