رسائی کے لنکس

فلوجہ میں امریکی عراقی فورسز کا چھاپہ، چھ ہلاک


امریکی اورعراقی فورسزنےباغیوں کےسابق گڑھ فلوجہ میں القاعدہ کےایک لیڈر کےخلاف حملےمیں چھ افراد کو ہلاک کردیا۔

امریکی فوج کے ایک ترجمان، میجر روب فلپس نےبتایا کہ امریکی فورسز کی مدد سےعراقی فوج نےچھاپے کی منصوبہ بندی اور قیادت کی۔

فلپس نے کہا کہ باغیوں نے اپنی پناہ گاہ سے سکیورٹی فورسز پر فائرنگ کی اور فوجیوں نے جوابی فائرنگ کی، جِس میں چھ افراد ہلاک ہوئے۔

تاہم فلوجہ شہر کے عہدے داروں کا کہنا ہے کہ سات افراد ہلاک ہوئے تھے جن میں بچے بھی تھے۔ ان کا کہنا ہے کہ حملہ غیر قانونی تھا اور اِس میں شہریوں کو ہدف بنایا گیا۔

میجر فلپس نے بتایا کہ عراقی افواج عراق میں القاعدہ کےایک چوٹی کے سرغنے کی تلاش کر رہی تھی جو عراقی عہدے دار کے مطابق دہشت گردی کی پشت پناہی کرتا ہے۔ تاہم یہ واضح نہیں ہے آیا ہلاک ہونے والوں میں وہ بھی شامل ہے۔

بدھ کے روز کا چھاپہ صدر براک اوباما کی طرف سے سرکاری طور پر عراق میں امریکی جنگی کارروائیوں کے خاتمے کے اعلان کے دو ہفتوں کے بعد سامنے آیا ہے۔

عراقی فوجیوں کی تربیت اور انسدادِ دہشت گردی کی کارروائیوں میں مدد دینے کی غرض سے تقریباً 50000امریکی فوجی عراق میں موجود رہیں گے۔

بدھ کے ہی دِن عراقی پولیس نےبتایا کہ موصل کے شمالی شہر میں سڑک پر نصب بم دھماکے میں نو عراقی سپاہی ہلاک اور چھ زخمی ہوئے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ یہ فوجی ایک منی بس میں سفر کر رہے تھے۔

XS
SM
MD
LG