رسائی کے لنکس

اسرائیل: مخلوط حکومت کے قیام کی کوششیں


بینجامن نیتن یاہو

بینجامن نیتن یاہو

وزیراعظم نیتن یاہو کو توقع ہے کہ انھیں حکومت بنانے کی دعوت دی جائے گی۔ اُنھوں نے کامیابی کا دعویٰ کرتے ہوئے وسیع مخلوط حکومت بنانے کا اعلان کیا

اسرائیل میں پارلیمانی انتخابات کے اب تک نتائج منقسم ہیں اور اس غیر متوقع نتائج کے بعد وزیراعظم بینجامن نیتن یاہو کو مخلوط حکومت بنانے کے لیے کام کرنا ہو گا۔

بدھ کو ننانوے فیصد ووٹوں کی گنتی مکمل ہونے کے بعد 120 اراکین کے ایوان میں دونوں اطراف کو 60، ساٹھ نشستیں ملی ہیں۔

وزیراعظم نیتن یاہو کو توقع ہے کہ انھیں حکومت بنانے کی دعوت دی جائے گی۔ اُنھوں نے کامیابی کا دعویٰ کرتے ہوئے وسیع مخلوط حکومت بنانے کا اعلان کیا۔

اس سے قبل اسرائیل کے وزیراعظم بینجامن نیتن یاہو نے منگل کو ہونے والے پارلیمانی انتخابات میں فتح کا دعویٰ کیا ہے اور کہا ہے کہ ان کی حکومت کی اولین ترجیح ایران کو جوہری ہتھیاروں کی تیاری سے روکنا ہے۔

ابتدائی جائزوں کے مطابق ان کی لیکوڈ پارٹی کو اپنی اتحادی جماعت کے ساتھ 120 ارکان کے پارلیمان میں معمولی برتری حاصل تھی، ان جائزوں کے بعد نیتن یاہو نے اپنے حامیوں سے خطاب کیا۔

اُنھوں نے اپنے پرجوش حامیوں سے کہا کہ ‘‘پہلا چیلنج ایران کو نیوکلیئر ہتھیاروں کے حصول سے روکنا ہے۔’’

اس سے قبل ابتدائی غیر سرکاری نتائج کے منٹوں کے اندر اندر مسٹر نیتن یاہو نے فیس بک پر ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ اِس سے ظاہر ہوتا ہے کہ اسرائیلی چاہتے ہیں کہ میں وزیر اعظم کے طور پر خدمات جاری رکھوں، اور یہ کہ میں ایک وسیع تر حکومت تشکیل دوں۔

تجزیہ کار کہتے ہیں کہ ییش اتید پارٹی کے لیڈر یئر لاپید کی بہتر کارکردگی کے باعث وہ یا تو اپوزیشن کے قائد بنیں گے یا پھر بصورتِ دیگر کابینہ میں کوئی اہم عہدہ سنبھالیں گے، اگر وہ مسٹر نیتن یاہو کے حکمراں اتحاد میں شرکت کا فیصلہ کرتے ہیں۔

اس سے قبل موصول ہونے والی خبروں میں قیاس کیا جارہا تھا کہ انتہائی دائیں بازو کی ابھرتی ہوئی جماعت 'جیوش ہوم پارٹی' کی عوامی مقبولیت میں اضافے کے باعث اس بار حکمران جماعت 'لیکوڈ پارٹی' کو گزشتہ انتخابات سے کم نشستیں ملیں گی۔
XS
SM
MD
LG