رسائی کے لنکس

شاہ اردن اور اسرائیلی وزیر دفاع میں ملاقات


اردن کے شاہ عبداللہ دوم (دائیں) اور اسرائیلی وزیر دفاع ایہود براک

اردن کے شاہ عبداللہ دوم (دائیں) اور اسرائیلی وزیر دفاع ایہود براک

اردن کے شاہ عبداللہ دوم نے اتوار کے روز اسرائیلی وزیر دفاع ایہود براک سے ملاقات کی، جس کے دوران فلسطینیوں اور اسرائیل کے درمیان عنقریب شروع ہونے والے براہ راست امن مذکرات پر بھی گفتگو ہوئی۔

دونوں شخصیات کے درمیان یہ ملاقات عمان میں شاہ عبداللہ کے محل میں ہوئی۔ براک نے شاہ سے کہا کہ اسرائیل اور فلسطینیوں کے درمیان کسی سمجھوتے پر پہنچنے کے سلسلے میں اردن کی مدد ایک اہم کردار ادا کرسکتی ہے۔

ملاقات کے دوران ، شاہ عبداللہ نے اپنے ملک کے اس موقف کا ایک بار پھر اعادہ کیا کہ مشرق وسطیٰ میں امن کا قیام علاقے اور دنیا دونوں کے مفاد میں ہے۔

اسرائیلی وزیر اعطم بن یامن نتن یاہو اور فلسطینی صدر محمود عباس ، توقع ہے کہ جمعرات کے روز واشنگٹن میں براہ راست مذاکرات شروع کریں گے۔ یہ براہ راست مذاکرات 2008ء کے بعد پہلی بار منعقد ہوں گے۔

اسی اثنا میں یروشلم میں ، ایک معروف اسرائیلی عالم دین نے یہ کہہ کر کہ مسٹر عباس اور فلسطینیوں کا کرہ ارض سے صفایا کردینا چاہیے، اختلافات کو پھر سے ہوا دینے کی کوشش کی ہے۔

شاس پارٹی کے روحانی راہنما عوفادیا یوسف نے ہفتے کے روز اپنے ایک واعظ میں فلسطینیوں کو ایک برائی اور اسرائیل کا بدترین دشمن قراردیا۔

فلسطینی اتھارٹی نے اس بیان پر کسی ردعمل کا اظہار نہیں کیا۔

89 سالہ عالم دین اس سے قبل بھی اس طرح کے بیانات دیتے رہے ہیں۔ ان کی کٹڑ قدامت پسند جماعت اسرائیل کی اتحادی حکومت میں شامل ہے۔

XS
SM
MD
LG