رسائی کے لنکس

مسجد اقصیٰ میں تمام عمر کے مسلمانوں کو جانے کی اجازت


فائل فوٹو

فائل فوٹو

اسرائیلی پولیس کے ترجمان کے مطابق جمعہ کو یروشلیم میں مقدس مقام کے علاوہ اس کے ارد گرد پولیس کے اضافی یونٹس تعینات کیے گئے۔

یروشلیم میں مسجد اقصیٰ میں جمعہ کو عبادت کے لیے تمام عمر کے مسلمانوں کو جانے کی اجازت دے دی گئی۔

اسرائیل نے حالیہ دنوں میں ہونے والے پرتشدد واقعات کے بعد یہاں 35 سال سے کم عمر کے مرد و خواتین کے لیے جانے کی پابندی عائد کر دی تھی۔

اسرائیلی پولیس کے ایک ترجمان مکی روزنفلڈ کا کہنا تھا کہ اسرائیل کو "امید ہے کہ آج حالات پرامن اور پرسکون رہیں گے۔"

انھوں نے بتایا کہ یروشلیم میں ٹیمپل ماؤنٹ اور اس کے ارد گرد پولیس کی اضافی نفری کو تعینات کیا گیا۔

یروشلیم کا یہ مقدس مقام مسلمانوں اور یہودیوں دونوں کے لیے مذہبی اعتبار سے بہت اہمیت رکھتا ہے۔

ایک دیرینہ معاہدے کے تحت یہودی ماؤنٹ ٹیمپل پر آ سکتے ہیں لیکن انھیں یہاں کھلے عام عبادت کی اجازت نہیں تھی کیونکہ اس سے مقامی عرب باشندوں کے ناراضی کا خدشہ ہوتا تھا۔ بعض یہودی حلقے یہاں زیادہ عبادت کے حق کو مزید بڑھانے کے لیے بھی دباؤ ڈالتے رہے ہیں۔

رواں ماہ کے اوائل میں یہاں ایک امریکی نژاد ربی کو فائرنگ کر کے شدید زخمی کردیا تھا۔ یہ ربی ایک کانفرنس میں ماؤنٹ ٹیمپل میں یہودیوں کے لیے عبادت کے حقوق بڑھانے سے متعلق وکالت کر رہا تھا۔

بعد ازاں اسرائیلی پولیس نے اس حملہ آور کو فائرنگ کرکے ہلاک کردیا تھا۔

XS
SM
MD
LG