رسائی کے لنکس

اٹلی: برلسکونی ٹیکس فراڈ مقدمہ، ایک سال کمیونٹی سروس کریں گے


سابق وزیر ِ اعظم برلسکونی کو ہر ہفتے میں میلان سے قدرے فاصلے پر واقع بزرگوں کے ایک گھر میں چار گھنٹے گزارنا ہوں گے۔

اٹلی کی ایک عدالت نے سابق وزیر ِاعظم سلویو برلسکونی کو ٹیکس فراڈ کیس کے سلسلے میں سزا سناتے ہوئے انہیں اگلے ایک سال تک چرچ کے زیر ِانتظام بزرگوں کے ایک نرسنگ ہوم میں کمیونٹی سروس پر مامور کر دیا ہے۔

سابق وزیر ِ اعظم برلسکونی کو ہر ہفتے میں میلان سے قدرے فاصلے پر واقع بزرگوں کے ایک گھر میں چار گھنٹے گزارنا ہوں گے۔

اس دوران وہ ان بزرگوں کی مدد کریں گے اور انہیں مذہبی فرائض کی ادائیگی کے لیے چرچ لے جایا کریں گے۔

واضح رہے کہ سابق وزیرِاعظم کو پارلیمان جانے کی آزادی نہیں اور نہ ہی کوئی سرکاری عہدے رکھنے کی اجازت ہے۔ مگر وہ سیاسی مہم میں حصہ لے سکتے ہیں اور روم بھی جا سکتے ہیں۔

گذشتہ برس اٹلی کی ایک عدالت نے سابق وزیر ِاعظم کو ٹیکس فراڈ کے ایک مقدمے میں چار سال کی سزا سنائی تھی۔ بعد میں اس سزا کو کم کرکے ایک سال کی کمیونٹی سروس میں تبدیل کر دیا گیا۔

برلسکونی کا شمار اٹلی کے امیر ترین افراد میں کیا جاتا ہے اور انہیں ابھی بھی اٹلی کی ایک بڑی سیاسی طاقت تصور کیا جاتا ہے۔

برلسکونی کا کہنا ہے ان کے خلاف مقدمہ بے بنیاد اور سیاسی عداوت پر مبنی تھا۔
XS
SM
MD
LG