رسائی کے لنکس

جاپان کے شمال مشرقی علاقوں کو سمندر طوفان کا سامنا


جاپان کے شمال مشرقی علاقوں کو سمندر طوفان کا سامنا

جاپان کے شمال مشرقی علاقوں کو سمندر طوفان کا سامنا

ایک شدید نوعیت کا سمندری طوفان بدھ کو جاپان کے شمال مشرقی ساحلی علاقوں سے ٹکرانے والا ہے جس سے رواں برس مارچ کے زلزلے اور سونامی سے علاقے میں ہونے والی تباہی میں مزید اضافے کا اندیشہ ظاہر کیا جارہا ہے۔

جاپان کے محکمہ موسمیات نے کہا ہے کہ طوفان، جسے 'روک' کا نام دیا گیا ہے، کے باعث وسطی جاپان میں شدید بارشیں ہوئی ہیں جبکہ اب وہ 100 کلومیٹر فی گھنٹہ سے زائد کی رفتار سے شمال مشرقی علاقوں کی جانب بڑھ رہا ہے۔

طوفان کےباعث پہلے ہی چار افراد ہلاک ہوچکے ہیں جبکہ کم از کم دو افراد لاپتہ ہیں۔ جاپان کی سب سے بڑی آٹو کمپنی 'ٹویوٹا موٹر کارپوریشن' نے طوفان کی آمد کےپیش نظر حفاظتی اقدامات کےطور پر وسطی جاپان میں موجود اپنی 11 فیکٹریوں میں شام کے اوقات میں پیداواری عمل روک دیا ہے۔

محکمہ موسمیات کے مطابق 11 مارچ کو آنے والے زلزلے اور سونامی سے متاثر ہونے والا 'فوکو شیما ڈائچی' نامی جوہری بجلی گھر بھی طوفان کے ممکنہ راستے میں آرہا ہے۔ تنصیب کے ترجمان نے کہا ہے کہ بجلی گھر کو بارش سے محفوظ رکھنے اور متاثرہ ری ایکٹرز سے تابکار پانی کے اخراج کو روکنے کے لیے تمام ضروری اقدامات کرلیے گئے ہیں۔

حکام نے طوفان کی شدت کے پیشِ نظر وسطی شہر 'نگویا' سے 10 لاکھ افراد کو انخلاء کا مشورہ دیتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ طوفان کے باعث نزدیکی دریاؤں میں طغیانی آنے سے علاقے کے زیرِ آب آنے کا اندیشہ ہے۔

مغربی اور وسطی جاپان کے کئی دیگر علاقوں سے بھی لگ بھگ ساڑھے تین لاکھ افرد کے انخلاء کے احکامات دیے گئے ہیں۔

یاد رہے کہ مغربی جاپان رواں ماہ کے آغاز پر آنے والے سمندری طوفان 'ٹالاس' سے ہونے والی تباہی سے نمٹنے کی جدوجہد میں مصروف ہے جس سے 80 افراد ہلاک یالاپتہ ہوگئے تھے۔

طوفان اپنے ساتھ کئی سڑکیں بہا لے گیا تھا جبکہ اس کے باعث ٹیلی فون اور بجلی کی ترسیل کے نظام کو بھی نقصان پہنچا تھا۔

XS
SM
MD
LG