رسائی کے لنکس

کراچی میں تشدد کی نئی لہر، پانچ ہلاک

  • ب

صوبہ سندھ کے وزیر داخلہ ذوالفقار مرزا نے پیر کی رات شہر میں ہونے والے ٹارگٹ کلنگ کے واقعات کے بارے میں ایک بار پھرکہا ہے کہ ان میں کالعدم تنظیموں سےوابستہ افراد ملوث ہیں۔

صوبائی وزیرداخلہ نےمنگل کومیڈیا سےبات چیت کرتے ہوئے کہا کہ کالعدم تنظیموں سپاہ صحابہ یا لشکرِجھنگوی کا ایک گروپ کراچی میں سرگرم ہے اوران ہلاکتوں میں اُسی گروہ کا ہاتھ ہے۔

کراچی میں ٹارگٹ کلنگ کی نئی لہر میں ایک شیعہ عالم دین کے بیٹے اور پولیس افسرسمیت پانچ افراد کو ہلاک کیا گیا ہے ۔ حکام کے مطابق کراچی کے علاقے ناظم آباد میں پیر کو رات دیر گئے مولانا یوسف حسین کے بیٹے مرزا خادم حسین کو نامعلوم مسلح افراد نے اُس وقت گولیاں مار کر ہلاک کردیا جب وہ اپنے گھر کی طرف جار ہے تھے۔

اس سے قبل ایک ڈپٹی سپریٹنڈنٹ پولیس کو اُن کے ڈرائیور کےہمراہ ایم اےجناح روڈ پر گولیاں مار کر ہلاک کر دیاگیا۔

کراچی میں رکن صوبائی اسمبلی رضا حیدر کو رواں ماہ کے اوائل میں فائرنگ کرکے ہلاک کردیاتھا جس کے بعدملک کی اقتصادی شہ رگ کہلانے والے اس شہر میں پرتشدد حملوں میں بیسیوں افراد مارے گئے تھے۔

XS
SM
MD
LG