رسائی کے لنکس

امریکی عہدیدار بات چیت کے لیے کرغزستان پہنچ گئے

  • ب

امریکہ کے ایک اعلیٰ عہدیداربدھ کو کرغزستان پہنچے ہیں جہاں وہ بحران کے خاتمے کے لیے عبوری رہنماؤں سے ملاقات کریں گے۔ اس وسطی ایشیائی ملک میں امریکہ نے ایک ہوائی اڈہ کرائے پر حاصل کررکھا ہے جسے وہ افغانستان میں تعینات اپنی افواج کوسامان رسد پہنچانے کے لیے استعمال کرتا ہے۔

نائب وزیر خارجہ رابرٹ بلیک پہلے اعلیٰ ترین امریکی عہدیدار ہیں جو سات اپریل کوکرغزستان میں پیدا ہونے والے بحران کے بعد یہاں کا دورہ کررہے ہیں۔ دارلحکومت بشکیک میں بڑے پیمانے پر پرتشد د ہنگاموں اور سکیورٹی فورسز کے ساتھ خونی جھڑپوں کے بعد حزب اختلاف کی جماعت نے اقتدار پر قبضہ کرکے وزیر خارجہ روضا اوتن بائیووف کو عبوری سربراہ بنانے کا اعلان کیا تھا۔ جب کہ صدر قرمان باقیف ملک کے جنوب میں اپنے آبائی علاقے جلال آباد چلے گئے تھے۔

امریکی سفارت خانے کے مطابق رابرٹ بلیک رات دیر گئے کرغزستان پہنچے ہیں اور وہ عبوری رہنماء روضا اوتن بائیووف سے ملاقات کریں گے اور بات چیت کے ایجنڈے میں سرفہرست بشکیک میں امریکہ کے زیراستعمال مناس کا ہوا ئی اڈہ ہوگا۔ امریکہ کو تشویش ہے کہ کرغزستان میں جاری بحران سے صدر قرمان کی حکومت کے ساتھ مناس ایئر بیس کی پانچ سالہ لیز کو متاثر کر سکتا ہے۔

روس کے صدر دمتری مدویدیف جن کے کرغزستان کی عبوری حکمرانوں کے ساتھ قریبی تعلقات ہیں اُن کا کہنا ہے کہ موجودہ بحران نے ملک خانہ جنگی کے دہانے پر پہنچادیا ہے۔

کرغزستان کے صدر قرمان باقییف نے گذشتہ روز کہا تھا کہ خود کو عبوری حکومت کہنے والی انتظامیہ اگر اُن کواہل خانہ سمیت تحفظ کی ضمانت فراہم کریں تووہ استعفیٰ دینے کے لیے تیار ہیں۔ عبوری حکومت کے ایک عہدیدار کے مطابق اگر مسٹر باقییف سبکدوش ہوجائیں اور ملک سے چلے جائیں تو اُنھیں حکومت تحفظ کی ضمانت فراہم کرنے پر آمادہ ہوگی۔

کرغزستان کی ایک عدالت نے بشکیک میں احتجاجی مظاہرین کی ہلاکتوں کے بعد مسٹر باقییف کے بھائی اور بیٹے کی گرفتاری کے وارنٹ جاری کررکھے ہیں۔ بشکیک میں گذشتہ ہفتے ہونے والی جھڑپوں میں کم ازکم 83 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

XS
SM
MD
LG