رسائی کے لنکس

افغان کانفرنس کا بائیکاٹ کرکے ایران ایک اچھا موقع ضائع کررہا ہے: برطانیہ



برطانیہ نے افغانستان کے بارے میں لندن کانفرنس کا بائیکاٹ کرنے کے ایرانی فیصلے پر نکتہ چینی کی ہے اور کہا ہے کہ تہران، جنگ سے تباہ حال ملک میں کوئى تعمیری کردار ادا کرنے کا ایک موقع ضائع کررہا ہے۔

وزیرِ اعظم گورڈن براؤن کے ایک ترجمان نے ایران کے فیصلے کو بہت مایوس کن قرار دیا۔ انہوں نے ایران پر زور دیا کہ وہ افغانستان کو مستحکم کرنے کی بین الاقوامی کوششوں میں کسی تعمیری طریقے سے ہاتھ بٹائے۔

ایران نے کہا تھا کہ وہ اپنےکسی بھی نمائندے کو لندن نہیں بھیج رہا ہے، اس لیے کہ اُس کے خیال میں ان مذاکرات میں بہت زیادہ توجہ فوجی مداخلت پر مرکوز ہے ۔

تہران، افغانستان میں امریکہ، برطانیہ اور نیٹو کے رکن دوسرے ملکوں کی فوجوں کی موجودگی پر یہ کہتے ہوئے نکتہ چینی کرتا رہا ہے کہ اُس ملک کے مسائل کا کوئى فوجی حل نہیں ہے۔

افغانستان کے ہمسایہ دوسرے تمام ملکوں نے لندن کانفرنس کے لیے اپنے نمائندے بھیجے ہیں، جس کا مقصد افغان جنگ کو ختم کرنے کے لیے کوئى حکمت عملی وضع کرنا اور اُس ملک میں دیر پا استحکام لانے کے طریقوں پر غور و خوض کرنا ہے۔

XS
SM
MD
LG