رسائی کے لنکس

ملائیشیا کے وزیر اعظم نے پورے ملک میں سیلاب متاثرین کے لیے 14 کروڑ 45 لاکھ ڈالر کی امداد کا اعلان کیا جو کہ نیشنل سکیورٹی کونسل کے ذریعے تقسیم کی جائے گی۔

ملائیشیا میں امدادی کارکن ملک میں آنے والے کئی عشروں کے سب سے شدید ترین سیلاب سے متاثر ہونے والے ہزاروں افراد تک پہنچنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

دریاؤں میں طغیانی کی وجہ سے ملک کی کم از کم آٹھ ریاستیں متاثر ہوئیں اور جس کی وجہ سے ہفتہ تک 160,000 سے زائد افراد کو گھر بار چھوڑنا پڑا اور کئی افراد کے ہلاک ہونے کی اطلاعات ہیں۔

ملائیشیا کے وزیراعظم نجیب رزاق سیلاب سے نمٹنے کے لیے کی جانے والی قومی کوششوں کی قیادت کرنے کے لیے ہوائی میں اپنی چھٹیوں کو مختصر کر کے ملک واپس پہنچے اور انہوں نے سیلاب سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والی کیلانٹن کی ریاست کا دورہ کیا۔ انھیں حکام نے سیلاب کی وجہ سے بگڑتی ہوئی صورت حال کے متعلق تفصیلات سے آگاہ کیا۔

ملائیشیا کے وزیر اعظم نے پورے ملک میں سیلاب متاثرین کے لیے 14 کروڑ 45 لاکھ ڈالر کی امداد کا اعلان کیا جو کہ نیشنل سکیورٹی کونسل کے ذریعے تقسیم کی جائے گی۔ یہ اس امدادی پیکج کے علاوہ ہے جس کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔

وزیر اعظم نجیب کو اس وقت شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا جب ان کی وہ تصاویر سامنے آئیں جس میں وہ امریکی صدر براک اوباما کے ساتھ گالف کھیلتے نظر آئے۔ ان کے فیس بک پیج پر لوگوں کے پیغامات میں ان پر زور دیا گیا کہ وہ سیلاب کی بگڑتی ہوئی صورت حال کے وجہ سے ملک واپس آئیں۔

ملائیشیا میں موسمیات کی پیشگوئی کرنے والوں کا کہنا ہے کہ یہ شدید بارشیں آئندہ چند روز تک جاری رہیں گی اور یہ جنوبی ریاستوں تک بھی پھیل جائیں گی جو ابھی تک ان سے متاثر نہیں ہوئیں۔

ملائیشیا کے ہمسایہ ممالک کو بھی شدید سیلاب کا سامنا ہے۔

XS
SM
MD
LG