رسائی کے لنکس

پاپ سٹار کی موت: مائیکل جیکسن کے معالج پر فردِ جرم عائد ہونے کا امکان


میں نے مائیکل کو خواب آور دوا دی تھی، معالج کا اقرار

توقع ہے کہ مائیکل جیکسن کےذاتی معالج پیرکے روز اپنے آپ کو کیلی فورنیا میں اہل کاروں کے سامنے پیش کردیں گے۔

ڈاکٹر کانریڈ مری کے پیرکی شام لاس انجلیس کی عدالت کے روبرو پیش ہونے کے امکانات ہیں۔

جب گذشتہ سال 50سالہ گلوکار کی موت واقع ہوئی تو اس وقت مری، مائیکل جیکسن کے ہمراہ تھے۔ فوتگی کی تفتیش کرنے والے عہدے داروںنے اس موت کو قتل قرار دیا ہے۔

مقدمے سے وابستہ ذرائع کا کہنا ہے کہ وہ سمجھتے ہیں کہ دل کے امراض کے ماہر پر غیرارادی قتل کا الزام عائد کیا جاسکتا ہے۔


لاس اینجلس کے اپنے محل میں جون کی 25تاریخ کو جیکسن کا انتقال ہوگیا تھا جس کا باعث دوائیوں کے مہلک مرکب کا استعمال بتایا جاتا ہے، جس میں بے ہوشی طاری کرنے والے اجزا شامل تھے۔

ڈاکٹر نے یہ بات تسلیم کی ہے کہ اُنھوں نے جیکسن کو یہ خواب آور دوا انہیں نیند کے لیے دی تھی، لیکن اِس دوا سے جیکسن کی ہلاکت واقع نہیں ہو سکتی تھی۔

XS
SM
MD
LG