رسائی کے لنکس

ممبئى کا ہوٹل2008 کے حملوں کے بعد جلد دوبارہ کُھل جائے گا


ممبئى کا ہوٹل2008 کے حملوں کے بعد جلد دوبارہ کُھل جائے گا

ممبئى کا ہوٹل2008 کے حملوں کے بعد جلد دوبارہ کُھل جائے گا

بھارتی شہر ممبئى میں تقریباً 18ماہ پہلےجن ہوٹلوں پر جنگجوؤں نے حملے کیے تھے ، اُن میں سے ایک مہنگا ہوٹل وسیع پیمانے پر مرمّت کے بعد ہفتے کے روز دوبارہ کُھل جائے گا۔

اوبرائے کے کے ایک ترجمان نے کہا ہے کہ ساحلِ سمندر پر واقع ہوٹل کے ریستورانوں اور 287 کمروں کی مرمّت کے کام پر تین کروڑ 50 لاکھ ڈالر خرچ ہوئے ہیں۔ترجمان نے فرانس کی خبر رساں ایجنسی کو بتایا ہے کہ اگلے ہفتے کے لیے ہوٹل میں پہلے ہی 37 کمرے بُک ہوچکے ہیں۔

مسلح جنگجوؤں نے نومبر 2008 میں اوبرائے اور تاج ہوٹل اور دوسری عمارتوں میں گھس کر تین دن تک اپنے حملوں میں 166 لوگوں کو ہلاک کردیا تھا۔ بھارتی عہدے داروں نے پاکستانی جنگجو گروپ لشکرِ طیبہ پر اُن حملوں کا الزام عائد کیا تھا۔

اوبرائے کے صدر لائم لَیمبرٹ کا کہنا ہے کہ ہوٹل میں حفاظتی انتظامات میں اضافہ کردیا گیا ہے ۔ اور ان انتطامات میں ہوٹل کے صدر دروازے پر آہنی پھاٹک، مزید محافظ ،سامان کی جانچ پڑتال کے لیے سَکیَنر، جامہ تلاشی اور سونگھ کر بَم کاسراغ لگانے والا ایک کتّا بھی شامل ہیں۔

XS
SM
MD
LG