رسائی کے لنکس

نیپال نےان 18 جلاوطن تبتیوں کو رہا کردیا ہے جنہیں اس ماہ کے شروع میں چینی سفارت خانے کے ویزے کے دفتر کے باہر احتجاج کرنے پر گرفتار کیا گیاتھا۔

کھٹمنڈو کے چیف ایڈمنسٹریٹر لکشمی دھاکل نے کہا کہ اس گروپ کو اس تعین کے بعد رہا کیا گیا کہ وہ سیکیورٹی کے لیے آئندہ کو خطرہ نہیں بنیں گے۔

پولیس نےچینی حکمرانی کے خلاف تبتی شورشوں کے آغاز کی سالگرہ کے موقع پر 10مارچ کو ہونے والے مظاہروں کے دوران 23تبتیوں کے ایک گروپ کو گرفتار کیاتھا۔

ان میں سے تین کو گذشتہ ہفتے رہا کردیا گیا تھا۔ ایسوسی ایٹڈ پریس کا کہنا ہے کہ ان میں دو مزید افراد کو طبی وجوہ کی بنا پر رہا کردیا گیا تھا۔

چین کا دعویٰ ہے کہ تبت سینکڑوں برسوں سے اس کے علاقے کا حصہ رہاہے، لیکن بہت سے تبتیوں کا اصرار ہے کہ یہ ہمالیائی خطہ1950 ء کے عشرے میں اس وقت تک آزا د تھا جب تک چینی فوجیوں نے اس پر حملہ نہیں کیا تھا۔



XS
SM
MD
LG