رسائی کے لنکس

نیپال 10 تبتی باشندوں کو واپس بھیج سکتا ہے


نیپال 10 تبتی باشندوں کو واپس بھیج سکتا ہے

نیپال 10 تبتی باشندوں کو واپس بھیج سکتا ہے

نیپال کی تارکینِ وطن کی ایجنسی کے سربراہ نے اتوار کے روز کہا ہے کہ اُن تبتی باشندوں سے یہ معلوم کرنے لیے پوچھ گچھ کی جارہی ہے کہ انہوں نے کن وجوہات کی بنا پر سرحد پار کی تھی

نیپال میں حکام نے کہا ہے کہ اُن 10 تبتی باشندوں کو واپس بھیجا جاسکتا ہے، جن پرغیر قانونی طریقے سے ملک میں داخل ہونے کا الزام ہے ۔

نیپال کی تارکینِ وطن کی ایجنسی کے سربراہ نے اتوار کے روز کہا ہے کہ اُن تبتی باشندوں سے یہ معلوم کرنے لیے پوچھ گچھ کی جارہی ہے کہ انہوں نے کن وجوہات کی بنا پر سرحد پار کی تھی۔

نیپال میں تبّت کے تقریباً 20 ہزار جلا وطن باشندے آباد ہیں۔نیپال اب سرکاری طور تبّت کے پناہ گزینوں کو ملک میں آباد ہونے کی اجازت نہیں دیتا۔ لیکن حکومت تبّت کے لوگوں کو ملک سے گزرکر بھارت جانے کی اجازت دیتی ہے، جہاں بودھوں کے لیڈر دلائى لامہ مقیم ہیں۔

حالیہ مہینوں میں چین، نیپال میں مقیم جلا وطن تبتی باشندوں کی پکڑ دھکڑ کے لیےنیپالی حکومت پر دباؤ ڈالتا رہا ہے اور نیپال نے وعدہ کیا ہے کہ وہ اپنی سرحدوں کے اندر چین کے خلاف احتجاجی مظاہروں کی اجازت نہیں دے گا۔

نیپال ، بیجنگ کی اُس ایک چین کی پالیسی پر کاربند ہے۔ جس میں کہا گیا ہے کہ تبت چین کا حصّہ ہے۔

XS
SM
MD
LG